Saturday , December 16 2017
Home / عرب دنیا / پاکستان میں امریکی سفارتخانے کی نئی عمارت پر شک کے بادل

پاکستان میں امریکی سفارتخانے کی نئی عمارت پر شک کے بادل

اسلام آباد ۔ 18 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے یہاں کے ڈپلومیٹک انکلیو میں ایک سات منزلہ امریکی سفارتخانے کی عمرات پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ اس کی سب سے اوپری منزل کو دیگر سرکاری دفاتر کی نگرانی کیلئے ’’بڑے ہی آرام کے ساتھ‘‘ استعمال کیا جاسکتا ہے جس سے چوکس رہنے کی ضرورت ہے۔ یاد رہیکہ آس پاس کے علاقوں میں سرکاری دفاتر ہیں۔ انگریزی اخبار ڈان کی اطلاع کے مطابق امریکی حکومت نے وزیراعظم پاکستان کی منظوری کے بغیر عمارت کی تعمیر کا سلسلہ جاری رکھا۔ یاد رہیکہ یہ انکشاف ایک ایسے وقت کیا گیا ہے جب پاکستان اور امریکہ کے تعلقات کشیدہ ہوچکے ہیں کیونکہ گذشتہ ماہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے پاکستان پر دہشت گردوں کو محفوظ ٹھکانے فراہم کرنے کا الزام عائد کیا تھا جو افغانستان میں امریکیوں کا قتل کررہے ہیں۔ امریکہ نے پاکستان کو انتباہ دیا تھا کہ ایسا کرنے پر اسے (پاکستان) صرف نقصان ہی نقصان ہوگا۔ آڈٹ رپورٹ کے مطابق عمارت کی تعمیر کیلئے وزیراعظم عباسی کی منظوری کا انتظار بھی نہیں کیا گیا۔ مذکورہ عمارت کے نقشہ کو جنوری 2012ء میں سی ڈی اے عہدیداروں پر مشتمل ایک کمیٹی اور منصوبہ بندی، ایمرجنسی، ڈیساسٹر مینجمنٹ اور پاکستان کونسل آف آرکیٹکٹس اینڈ ٹاؤن پلانرس کے ارکان کی جانب سے منظوری دی گئی تھی۔

TOPPOPULARRECENT