Monday , June 25 2018
Home / پاکستان / پاکستان میں ایک لڑکی کی دو مرتبہ جبری شادی

پاکستان میں ایک لڑکی کی دو مرتبہ جبری شادی

لاہور 18 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی صوبہ پنجاب میں ایک لڑکی کا مبینہ طور پر اغواء کرتے ہوئے 2 مقامات پر اُس کی زبردستی شادی کی گئی بعدازاں اُسے سرعام برہنہ کیا گیا اور اجتماعی عصمت ریزی بھی کی گئی۔ پولیس نے کہا ہے کہ اِس لڑکی کا بھائی اپنے دیہات کی ایک خاتون کے ساتھ بھاگ گیا تھا جس کا انتقام لینے کے لئے بہن کا اغواء کیا گیا تھا۔ پولیس نے کہاکہ ضلع چنیوٹ میں یہ واقعہ پیش آیا جہاں 22 سالہ ثناء اللہ ملاح طبقہ سے تعلق رکھنے والے ایک شخص کی بیٹی کے ساتھ بھاگ گیا تھا کیونکہ کئی خاندانوں نے اُس لڑکی سے اپنے بچوں کی شادی سے انکار کیا تھا۔ لڑکی کے خاندان نے پنچایت طلب کیا اور پنچایت نے فیصلہ دیا کہ ثناء اللہ کی بہن سے اُس لڑکے کی شادی کی جائے جس کی بہن اُس کے ساتھ بھاگ گئی ہے۔بعدازاں متاثرہ لڑکی کی شادی لڑکے کے چچازاد بھائی نوراحمد سے کی گئی تھی جس نے 5 دن بعد طلاق دے دیا اور چار دن بعد اس کے خاندان کے چار افراد نے لڑکی کی اجتماعی عصمت ریزی کی۔ بعدازاں اس لڑکی کو برہنہ کرتے ہوئے درخت سے باندھ دیا گیا اس کے بعد اس کے ماں باپ کو طلب کرتے ہوئے کہا گیا کہ وہ ان کے بیٹے کے ساتھ بھاگی ہوئی لڑکی کو واپس لاکر اپنی لڑکی لے جائیں۔

TOPPOPULARRECENT