Monday , January 22 2018
Home / Top Stories / پاکستان میں دو چرچوں پر خودکش حملہ ، 15 ہلاک

پاکستان میں دو چرچوں پر خودکش حملہ ، 15 ہلاک

لاہور ۔ /15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) طالبان کے دو خودکش بمباروں نے آج دو پرہجوم گرجا گھروں کو نشانہ بناتے ہوئے خود کو دھماکے سے اڑالیا ۔ اس کے نتیجہ میں 15 افراد ہلاک اور تقریباً 80زخمی ہوگئے ۔ لاہور میں سب سے بڑی عیسائی آبادی والی بستی میں اتوار کو خصوصی عبادت کے دوران یہ واقعہ پیش آیا اور اس کے بعد ہجوم تشدد پر اتر آیا جس میں دو مشتبہ دہشت گ

لاہور ۔ /15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) طالبان کے دو خودکش بمباروں نے آج دو پرہجوم گرجا گھروں کو نشانہ بناتے ہوئے خود کو دھماکے سے اڑالیا ۔ اس کے نتیجہ میں 15 افراد ہلاک اور تقریباً 80زخمی ہوگئے ۔ لاہور میں سب سے بڑی عیسائی آبادی والی بستی میں اتوار کو خصوصی عبادت کے دوران یہ واقعہ پیش آیا اور اس کے بعد ہجوم تشدد پر اتر آیا جس میں دو مشتبہ دہشت گرد جلادیئے گئے ۔ حملہ آوروں نے رومن کیتھولک چرچ اور کرائسٹ چرچ واقع یوحان آباد کے باب الداخلہ پر خودکش حملہ کیا ۔ سنڈے ماس کے دوران کئے گئے حملہ میں بھگدڑ کی کیفیت پیدا ہوگئی اور لوگ خود کو بچانے کیلئے خوف کے عالم میں دوڑنے لگے ۔ تحریک طالبان پاکستان کے علحدہ شدہ گروپ جماعت الاحرار نے اس حملہ کی ذمہ داری قبول کی ہے جس میں تقریباً 14 افراد بشمول ایک ملازم پولیس ہلاک ہوگئے ۔

لاہور جنرل ہاسپٹل کے عہدیداروں نے توثیق کی ہے کہ یوحان آباد علاقہ میں ہوئے دھماکوں میں مہلوکین کی تعداد 15 تک پہنچ گئی ہے جبکہ زخمیوں کی تعداد 80 ہوگئی ہے جن میں کئی بری طرح زخمی افراد بھی شامل ہیں ۔ مقامی عیسائی لیڈر اسلم پرویز موہترا نے بتایا کہ کرائسٹ چرچ اور کیتھولک چرچ میں اتوار کی عبادات جاری تھیں ۔ دو خودکش بمبار وہاں پہنچے اور انہوں نے گرجا گھر میں گھسنے کی کوشش کی ۔ جب سکیورٹی گارڈس نے انہیں داخل ہونے سے روکدیا تب انہوں نے خود کو دھماکہ سے اڑالیا ۔ انہوں نے کہا کہ جس وقت یہ دھماکہ ہوا عیسائیوں کی کثیر تعداد چرچس میں موجود تھی ۔ پنجاب ایمرجنسی سرویسیس کے ترجمان جام سجاد نے بتایا کہ راحت کاری حکام نے زخمیوں کو قریبی ہاسپٹل منتقل کیا ہے ۔

نہوں نے کہا کہ یہ خودکش حملہ تھا اور عینی شاہدین کے مطابق دہشت گردوں کو پولیس اہلکار اور مقامی گارڈس نے چرس میں داخل ہونے سے روکدیا تھا ۔ حملہ کے فوری بعد برہم ہجوم نے دو مشتبہ افراد کو بری طرح زدوکوب کیا جو مبینہ طورپر حملہ میں ملوث تھے ۔ بعد میں ان دونوں کو عوام نے آگ میں جھونک دیا جس کے نتیجہ میں دونوں جھلس کر ہلاک ہوگئے ۔ ایک عینی شاہد نے کہا کہ ہم نے دو مشتبہ افراد کو نشانہ بنایا جو سمجھا جاتا ہے کہ خودکش بمباروں کے ساتھی تھے ۔ انہوں نے کہا کہ برہم ہجوم نے دو دہشت گردوں کو زدوکوب کرنے کے بعد آگ لگادی ۔ ان دو مشتبہ افراد نے اعتراف کیا ہے کہ وہ خودکش بمباریوں کے ساتھی ہیں اور کارروائی پر نظر رکھنے کیلئے یہاں آئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT