Saturday , April 21 2018
Home / پاکستان / پاکستان میں مذہبی جماعتوں کے ورکرس پر حملوں میں اضافہ : رپورٹ

پاکستان میں مذہبی جماعتوں کے ورکرس پر حملوں میں اضافہ : رپورٹ

پشاور۔ 17 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان میں خصوصی طور پر اس بات کو نوٹ کیا جارہا ہے کہ 2017ء کے دوران ایسے ورکرس پر جن کا تعلق مذہبی پارٹیوں سے ہے، حملوں میں اضافہ ہوا ہے جبکہ سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے ورکرس پر کئے جانے والے حملوں میں 50% کمی آئی ہے۔ سنٹر فار ریسرچ اینڈ سکیورٹی اسٹڈی کی جانب سے تیار کردہ رپورٹ میں یہ انکشاف کیا گیا جس کے مطابق 2017ء میں مذہبی یا دینی پارٹیوں سے تعلق رکھنے والے 34 ورکرس جاں بحق ہوئے جبکہ 2016ء میں یہی تعداد 12 تھی۔ 2016ء میں ہی سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے 52 ورکرس ہلاک ہوئے جبکہ 2017ء میں یہی تعداد 28 رہی۔ رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ 80% سیاست داں اور مقامی قائدین کو ٹارگٹ کلنگس اور خودکش حملوں کے ذریعہ نشانہ بنایا گیا۔مجموعی طور پر 2017ء میں خودکش حملوں، بم دھماکوں ، شخصی جھڑپوں اور دیگر مجرمانہ سرگرمیوں میں 2057 افراد ہلاک ہوئے جن میں سکیورٹی اہلکار، عام شہری بشمول 28 سیاست داں بھی شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT