پاکستان میں مندروں اور گردواروں پر حملے

کراچی ۔ 17 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستانی صوبہ سندھ میں ایک مقدس کتاب کی مبینہ بے حرمتی پر عوام کے برہم ہجوم نے کئی ہندو مندروں اور سکھ گردواروں کو نذر آتش کرنے کی کوشش کی۔ شورش زدہ صوبہ بلوچستان ان دونوں اقلیتی طبقات کی عبادت گاہوں کو نقصان سے محفوظ رکھنے کیلئے سکیورٹی فورسیس تعینات کئے گئے ہیں۔ بلوچستان میں گزشتہ روز بھی احتجاجی

کراچی ۔ 17 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستانی صوبہ سندھ میں ایک مقدس کتاب کی مبینہ بے حرمتی پر عوام کے برہم ہجوم نے کئی ہندو مندروں اور سکھ گردواروں کو نذر آتش کرنے کی کوشش کی۔ شورش زدہ صوبہ بلوچستان ان دونوں اقلیتی طبقات کی عبادت گاہوں کو نقصان سے محفوظ رکھنے کیلئے سکیورٹی فورسیس تعینات کئے گئے ہیں۔ بلوچستان میں گزشتہ روز بھی احتجاجی مظاہرے کئے گئے تھے ۔ جعفر آباد میں ہجوم نے کئی دوکانات کو نذر آتش کردیا ۔ روزنامہ ڈان نے خبرد ی کے احتجاجیوں کی کثیرتعداد نے ہندو منادر اور سکھ گردواروں پر حملوں کی کوشش کی۔ اشرار نے ہندو محلہ جات میں گھسنے کی کوشش بھی کی تھی لیکن پولیس اور

دیگر فورسیس نے ان کی کوشش کو ناکام بنادیا۔ ڈیرہ اللہ یار میں ایک مندر پر حملہ سے احتجاجیوں کو روکنے کیلئے سکیورٹی فورسیس نے فائرنگ کی ۔ سندھ سے متصلہ اضلاع جعفر آباد ، نصیرآباد اور سوبت پور میں آج تمام بڑے تجارتی مراکز ، مارکٹس اور دوکانات بند رہے۔ مندروں اور گردواروں پر سکیورٹی انتظامات میں زبردستی اصافہ کردیا گیا ہے ۔ پولیس اور دیگر فورسیس سے وابستہ اہلکار ہندو اور سکھ محلہ جات میں طلایہ گردی کررہے ہیں۔ ایک ہجوم نے گزشتہ روز سندھ کے شہر لاڑکانہ میں ایک مندر پر حملہ کیا تھا ۔ یہ شہر بھٹو خاندان کا آبائی علاقہ اور پاکستان پیپلز پارٹی کا طاقتور گڑ ھ ہے ۔ ایک ہندو شخص کو احتیاطی تدابیر کے طورپر تحویل میں لے لیا گیا ہے جس پر گستاخی کا شبہ کیا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT