Wednesday , September 19 2018
Home / دنیا / پاکستان میں پھانسی کی سزا کی برخاستگی پر زور

پاکستان میں پھانسی کی سزا کی برخاستگی پر زور

اقوام متحدہ ۔ 27ڈسمبر۔( سیاست ڈاٹ کام ) اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل بان کی مون نے حکومت پاکستان پر زور دیا ہے کہ وہ مجرمین کو پھانسی دینے کا عمل بند کرے اور سزائے موت پر دوبارہ امتناع عائد کیا جائے۔ پشاور اسکول پر ہوئے دہشت گرد حملے میں 150 بے قصور افراد کی ہلاکتوں کے بعد حکومت پاکستان نے سزائے موت پر گزشتہ چھ سال سے عائد امتناع ختم کرنے

اقوام متحدہ ۔ 27ڈسمبر۔( سیاست ڈاٹ کام ) اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل بان کی مون نے حکومت پاکستان پر زور دیا ہے کہ وہ مجرمین کو پھانسی دینے کا عمل بند کرے اور سزائے موت پر دوبارہ امتناع عائد کیا جائے۔ پشاور اسکول پر ہوئے دہشت گرد حملے میں 150 بے قصور افراد کی ہلاکتوں کے بعد حکومت پاکستان نے سزائے موت پر گزشتہ چھ سال سے عائد امتناع ختم کرنے کا فیصلہ کیا تھا جس کے پیش نظر بان کی مون نے یہ اپیل کی ہے۔ بان نے 25 ڈسمبر کو پاکستان کے وزیراعظم نواز شریف سے ٹیلی فون پر بات چیت کرتے ہوئے اسکول پر ہوئے حملے کے متاثرہ عوام اور حکومت سے تعزیت کا اعادہ کیا تھا۔ بان کی مون کے ایک ترجمان نے اس ضمن میں ایک تحریری بیان پڑھا جس میں کہا گیا تھا کہ ’’سکریٹری جنرل نے دشوارکن حالات کی سنگینی کو پوری طرح تسلیم کیا ہے اور حکومت پاکستان پر زور دیا کہ وہ مجرمین کو دی جانے والی پھانسی کا عمل بند کرے اور سزائے موت پر دوبارہ امتناع عائد کیا جائے ‘‘۔ بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ سکریٹری جنرل اور وزیراعظم نے جمہوریت اور قانون کی حکمرانی کی اہمیت کے علاوہ آزاد عدلیہ اور پاکستانی عوام کے جذبات کے احترام کا نوٹ لیا ۔ تمام قانونی ضابطوں کی پابندی کیلئے نواز شریف کے تیقن کا بان کی مون نے خیرمقدم کیا ہے۔ اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق زید رعد الحسین نے اس ہفتہ کے اوائیل میں یہ کہتے ہوئے پاکستان کی مذمت کی تھی کہ ایک ایسے وقت جب ساری بین الاقوامی برادری سزائے موت کے استعمال سے دوری اختیار کررہی ہے پاکستان نے اس سزاء پر اپنے پاس عائد امتناع کو برخاست کردیا ہے ۔ زید نے خبردار کیا کہ کوئی بھی نظام انصاف خواہ وہ کتنا ہی سخت کیوں نہ ہو غلط انداز میں سزائے موت کے عمل کے خلاف کوئی ضمانت نہیں دے سکتا۔

TOPPOPULARRECENT