Tuesday , November 21 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں ہندو بیوی کو مسلم شوہر کیساتھ رہنے کی اجازت

پاکستان میں ہندو بیوی کو مسلم شوہر کیساتھ رہنے کی اجازت

اسلام آباد ۔ 26اگسٹ ۔(سیاست ڈاٹ کام) ایک 21 سالہ ہندو خاتون جو حلقہ بگوش اسلام ہوگئی تھی ، اُسے پاکستان کی ایک عدالت نے اُس کے مسلمان شوہر کے ساتھ رہنے کی اجازت دیدی ۔ خاتون نے عدالت سے خواہش کی تھی کہ اُس نے چونکہ اپنی مرضی سے مذہب اسلام قبول کیا ہے لہذا اُسے اپنے شوہر کے ساتھ زندگی گزارنے کی اجازت دی جائے ۔ وہ اپنے والدین کے ساتھ رہنا نہیں چاہتی ۔ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے کل اس معاملہ کی سماعت کے بعد پولیس کو بھی مذکورہ خاتون کو تحفظ فراہم کرنے کی ہدایت کی ۔ ماریہ نامی خاتون جس کا ہندو نام انوشی تھا ، کے ارکان خاندان نے یہ الزام عائد کیا تھا کہ اُس کا اغواء کیا گیا تھا اور بعد ازاں جبری طورپر تبدیلیٔ مذہب کرواکے اُسے مسلمان بنایا گیا اور مسلمان مرد سے اُس کی شادی کردی گئی ۔ ماریہ نے کمرۂ عدالت میں قرآنی آیات تلاوت کرتے ہوئے یہ ثابت کیا کہ اُس نے اپنی مرضی سے مذہب اسلام قبول کیا اور کسی نے بھی اُس کے ساتھ کوئی جبر نہیں کیا۔

TOPPOPULARRECENT