Wednesday , January 24 2018
Home / دنیا / ’’پاکستان پر دباؤ ڈالنے مزید کئی راستے کھلے ہیں‘‘

’’پاکستان پر دباؤ ڈالنے مزید کئی راستے کھلے ہیں‘‘

اسلام آباد کی جانب سے طالبان اور حقانی نٹورک کیخلاف فیصلہ کن کارروائی ناگزیر ، واشنگٹن کی وارننگ

واشنگٹن ۔ 6 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) وہائیٹ ہاؤز نے آج خبردار کیا کہ طالبان اور حقانی نٹورک کے خلاف فیصلہ کن کارروائی اور ان کی محفوظ پناہ گاہوں کا خاتمہ کرنے پاکستان پر دباؤ ڈالنے کیلئے پاکستان کو دی جانے والی 2 ارب ڈالر کی سیکورٹی امداد کی معطلی کے علاوہ ’’دیگر تمام اقدامات کے راستے بھی کھلے ‘‘ ۔ عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائی میں پاکستان کی ناکامی پر امریکہ نے اس کو دی جانے والی 2 ارب ڈالر کی امداد کو گزشتہ روز معطل کردیا تھا ۔ امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے سال نو کے موقع پر اپنے ٹوئیٹ میں پاکستان الزام عائد کیا تھا کہ اس نے گزشتہ 15 سال کے دوران 33 ارب ڈالر کی امداد کے بدلے امریکہ کو جھوٹ اور دھوکے کے سواء کچھ نہیں دیا اور اپنی سرزمین پر دہشت گردوں کو محفوظ پناہ گاہیں فراہم کرتا رہا ۔ ٹرمپ انتظامیہ کے ایک سینئر عہدیدار نے اخباری نمائندوں سے کہا کہ ’’طالبان اور حقانی نٹورک کے خلاف کارروائی کیلئے پاکستان کو سمجھانے کی کوشش اور اس (پاکستان) سے نمٹنے کیلئے امریکہ کے پاس محض واحد سکیورٹی امداد ( کی معطلی) کے علاوہ اور بھی کئی راستے اور اختیارات موجود ہیں ‘‘ ۔ اس عہدیدار نے اپنی شناخت مخفی رکھنے کی شرط پر مزید کہا کہ ’’اس خطرہ سے نمٹنے کے لئے امریکہ کے عزم و عہد پر کسی کو بھی یقیناً کوئی شک و شبہ نہیں ہونا چاہئیے اور میں کہوں گا کہ (اس مقصد کیلئے ) تمام راستے کھلے ہیں ‘‘ ۔ پاکستان کو دی جانے والی امریکہ کی معطل شدہ امداد میں اس ملک کو مالیاتی سال 2017 ء کے دوران پاکستان کو دیئے جانے والے اتحادی امدادی فنڈس میں 900 ملین ڈالر بھی شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT