Friday , January 19 2018
Home / کھیل کی خبریں / پاکستان کو ویسٹ انڈیز کے خلاف بدترین شکست

پاکستان کو ویسٹ انڈیز کے خلاف بدترین شکست

کرائسٹ چرچ۔21 فبروری (سیاست ڈاٹ کام)ونڈے کرکٹ کی تاریخ کے بدترین آغاز کے بعد پاکستان کو ورلڈ کپ میں گروپ بی کے اہم مقابلے میں ویسٹ انڈیز کے خلاف 150 رنز کے بڑے فرق سے شکست ہوئی ہے۔یہ ٹورنمنٹ میں پاکستان کی لگاتار دوسری اور ورلڈ کپ مقابلوں میں رنز کے اعتبار سے سب سے بڑی شکست ہے اور اب اس کے لئے کوارٹر فائنل میں رسائی مشکل ہوگئی ہے۔کرائ

کرائسٹ چرچ۔21 فبروری (سیاست ڈاٹ کام)ونڈے کرکٹ کی تاریخ کے بدترین آغاز کے بعد پاکستان کو ورلڈ کپ میں گروپ بی کے اہم مقابلے میں ویسٹ انڈیز کے خلاف 150 رنز کے بڑے فرق سے شکست ہوئی ہے۔یہ ٹورنمنٹ میں پاکستان کی لگاتار دوسری اور ورلڈ کپ مقابلوں میں رنز کے اعتبار سے سب سے بڑی شکست ہے اور اب اس کے لئے کوارٹر فائنل میں رسائی مشکل ہوگئی ہے۔کرائسٹ چرچ میںکھیلے گئے میچ میں ناقص بولنگ اور فیلڈنگ کے بعد پاکستانی بیٹسمینس بھی ناکام رہے اور 311 رنز کے نشانے کے تعاقب میں پاکستانی ٹیم 39 اوور میں 160 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔پاکستان کے لئے صہیب مقصود اور عمر اکمل نے نصف سنچریاں بنائیں ۔پاکستان کے ابتدائی 4 کھلاڑی صرف ایک رن کے مجموعی اسکور پر آؤٹ ہوئے جو کہ ونڈے کرکٹ کی تاریخ میں کسی بھی ٹیم کا بدترین آغاز ہے۔اس سے پہلے یہ ریکارڈ کینیڈا کے نام تھا جس نے 16 مئی 2006 کو زمبابوے کے خلاف چار رن کے اسکور پر چار وکٹ گنوائے تھے۔پاکستانی بیٹسمینوں کے پاس جیروم ٹیلر کی سوئنگ بولنگ کا کوئی جواب نہ تھا اورپاکستان کی دو وکٹیں پہلے ہی اوور میں گریں

جب ناصر جمشید اور یونس خان بغیر کوئی رن بنائے جیروم ٹیلر کی گیندوں پر کیچ دے بیٹھے۔حارث سہیل بھی ٹیلر کے اگلے اوور میں اسکورر کو کوئی زحمت دیئے بغیر پویلین لوٹ گئے جبکہ احمد شہزاد نے صرف ایک رن بنایا اور جیسن ہولڈر کی پہلی وکٹ بنے۔مصباح الحق اور صہیب مقصود نے اسکور 25 تک پہنچایا ۔اس کے بعد عمر اکمل نے صہیب مقصود کے ساتھ مل کر چھٹی وکٹ کے لئے 80 رنز کی اہم شراکت قائم کی۔عمر اکمل نے 59 رنز کی اننگز کھیلی لیکن بیٹنگ پاور پلے میں لیگ سائیڈ پر موجود واحد فیلڈر کو کیچ دے بیٹھے ۔ویسٹ انڈیز کی جانب سے جیروم ٹیلر اور آندرے رسل تین، تین وکٹوں کے ساتھ سب سے کامیاب بولر رہے۔قبل ازیں آخری اوورس میں آندرے رسل کے ہی جارحانہ 42 رنز کی بدولت ویسٹ انڈیز کی ٹیم 310 رنز بنانے میں کامیاب رہی۔اننگز کے آخری پانچ اوورز میں ویسٹ انڈیز نے 79 رن بنائے۔آندرے رسل نے صرف 13 گیندیں کھیلیں اور چار چھکوں اور تین چوکوں کی مدد سے 42 رنز بنا ئے۔پاکستان کی فیلڈنگ اس میچ میں بہت مایوس کن رہی اور 6 کیچ گرنے کے علاوہ رن آؤٹ کے کم از کم دو یقینی مواقع ضائع ہوئے۔

TOPPOPULARRECENT