Thursday , December 14 2017
Home / عرب دنیا / پاکستان کیلئے سخت سفارتی پالیسی : رپورٹ

پاکستان کیلئے سخت سفارتی پالیسی : رپورٹ

اسلام آباد ۔ 18 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی میڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق اگر امریکہ نے پاکستان پر سخت تحدیدات عائد کیں تو اس صورت میں پاکستان نے بھی امریکہ کیلئے سخت سفارتی پالیسی اختیار کرنے کا ذہن بنا لیا ہے۔ یاد رہیکہ حال ہی میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے افغانستان اور جنوبی ایشیاء کیلئے اپنی نئی پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے پاکستان پر یہ کہہ کر سخت ریمارکس کئے تھے کہ اس نے دہشت گردوں کو محفوظ ٹھکانے بنانے میں اہم رول ادا کیا ہے جس کے بعد پاکستان نے بھی اپنی برہمی کا اظہار کیا تھا۔ امریکہ ابتداء سے ہی پاکستان پر یہ الزام عائد کرتا رہا ہیکہ اس نے دہشت گردوں کی سرکوبی کیلئے درکار کارروائی نہیں کی۔ ٹرمپ کے اعلان کے صرف ایک روز بعد ہی امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹلرسن نے یہ مشورہ دیا تھا کہ پاکستان اگر امریکہ کو درکار اقدامات نہیں کرتا تو پھر پاکستان کی ایک غیرناٹو حلیف ملک کے طور پر درجہ بندی کم کردی جائے۔ ایکسپریس ٹرینوں کے مطابق حکومت پاکستان نے بھی تین متبادلوں پر مشتمل ایک سخت سفارتی پالیسی وضع کی ہے جس میں امریکہ کے ساتھ سفارتی تعلقات میں بتدریج کمی، دہشت گردی سے متعلق باہمی تعاون میں کمی اور امریکہ کی افغان پالیسی پر عدم تعاون شامل ہے۔ دریں اثناء وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی توقع ہیکہ امریکی نائب صدر مائیک پنس سے ملاقات کریں گے جبکہ دونوں ممالک کے وزرائے خارجہ کی ملاقات بھی عنقریب ہونے والی ہے۔

TOPPOPULARRECENT