Monday , February 19 2018
Home / ہندوستان / پاکستان کی فائرنگ میں بی ایس ایف جوان شہید

پاکستان کی فائرنگ میں بی ایس ایف جوان شہید

اننت ناگ میں جنگجوؤں کا بھی حملہ ،سی آر پی ایف کے 5 اہلکار زخمی، لشکر طیبہ نے ذمہ داری قبول کی

جموں2نومبر(سیاست ڈاٹ کام )جموں علاقہ کے سامبا سیکٹر میں بین الاقوامی سرحد کے نزدیک پاکستانی رینجر ز کی فائرنگ میں بی ایس ایف کا ایک جوان شہید ہوگیا۔سرکاری ترجمان نے اپنے بیان میں کہاکہ پاکستانی رینجرز نے بغیر کسی اشتعال کے صبح تقریباً 9:30 بجے مذکورہ علاقہ میں فائرنگ کی۔انہوں نے کہا کہ بلااشتعال اس فائرنگ میں بی ایس ایف کانسٹبل تپن منڈل سنگین طور سے زخمی ہوئے ۔منڈل کو فوراً اسپتال لے جایاگیا،جہاں ان کی موت ہوگئی۔شہید جوان تپن منڈل مغربی بنگال ضلع مرشد آباد کے گاؤں ستوئی کا متوطن تھا۔دریں اثناء جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں جمعرات کی صبح سنٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کی ایک گاڑی پر پیش آئے حملے میں 5 جوان زخمی ہوگئے ۔ جنگجو تنظیم لشکر طیبہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ضلع اننت ناگ کے کے پی روڑ پر واقع لازی بل میں جنگجوؤں نے سی آر پی ایف 96بٹالین کی گاڑی پر فائرنگ کی۔ انہوں نے بتایا کہ جنگجوؤں کی اس فائرنگ میں سی آر پی ایف کے 5 جوان زخمی ہوگئے جنہیں علاج ومعالجہ کے لئے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے ۔ تاہم جنگجو فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ۔سیکورٹی ذرائع نے بتایا کہ سی آر پی ایف کے دو جوان گولی لگنے جبکہ باقی دیگر ٹوٹے ہوئے شیشوں کی ضرب سے زخمی ہوگئے۔ انہوں نے بتایا کہ جنگجوؤں کی طرف سے یہ حملہ اس وقت کیا گیا جب علاقہ میں کوئی روڑ اوپنگ پارٹی موجود نہیں تھی۔ ذرائع نے بتایا کہ حالانکہ حملے میں ملوث جنگجوؤں کو ڈھونڈ نکالنے کے لئے علاقہ میں فوری طور پر تلاشی آپریشن شروع کیا گیا، تاہم وہ فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے تھے ۔انہوں نے بتایا کہ حملے کا نشانہ بننے والی سی آر پی ایف گاڑی کھنہ بل (اننت ناگ) سے مٹن پہلگام جارہی تھی۔ دریں اثنا جنگجو تنظیم لشکر طیبہ نے سی آر پی ایف کی گاڑی پر حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے ۔ تنظیم کے ایک ترجمان نے یہاں مقامی خبررساں ایجنسیوں کو بتایا ہے کہ حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ ترجمان نے وادی میں ایسے مزید حملے انجام دینے کی دھمکی دی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT