Saturday , November 18 2017
Home / دنیا / پاک ۔ افغان کے درمیان ثالثی کا رول کرنے امریکہ کا انکار

پاک ۔ افغان کے درمیان ثالثی کا رول کرنے امریکہ کا انکار

واشنگٹن ۔ 17 جون (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے پاکستان اور افغانستان کے درمیان ثالثی سے صاف انکار کردیا ہے اور دونوں ممالک سے خواہش کی ہیکہ وہ طورخم سرحد کراسنگ پر پائی جانے والی کشیدگی کو ازخود ختم کریں جہاں حالیہ جھڑپوں میں ایک پاکستانی میجر اور افغان بارڈر کے دو گارڈس ہلاک ہوگئے تھے جبکہ دونوں جانب زخمیوں کی جملہ تعداد 20 بتائی گئی۔ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ ترجمان جان کربی نے اپنی روزمرہ کی نیوز بریفنگ کے دوران اخباری نمائندوں کو بتایا کہ یہ ایک فطری بات ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان پائی جانے والی کشیدگی سے ہم بھی تشویش میں مبتلاء ہیں، خصوصی طور پر طورخم کراسنگ پر جو کشیدگی ہے وہ بہت زیادہ ہے۔ دونوں ممالک کا یہ فرض ہیکہ وہ اپنی کشیدگیاں آپ خود دور کرلیں اور تشدد کا راستہ چھوڑ کر مذاکرات کی راہ اپنائیں۔ کراسنگ کو کھلا رکھیں۔ امریکی کا سوچنا یہ ہیکہ اس کیلئے افغانستان کو مصالحت کیلئے پہل کرنی چاہئے۔ ہم اس سلسلہ میں افغان صدر اشرف غنی کے ساتھ اپنے تعاون کا سلسلہ جاری رکھیں گے کیونکہ یہ وہ شخصیت ہیں جنہوں نے دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی کم کرنے کیلئے سنجیدہ کوششیں کی ہیں لہٰذا فی الحال یہ کہا نہیں جاسکتا کہ سرحد پر پائی جانے والی کشیدگی کا مصالحتی عمل پر کیا اثر مرتب ہوتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT