Saturday , October 20 2018
Home / ہندوستان / پدماوتی تنازعہ ‘ ملک بھر میں آج 15 منٹ شوٹنگس نہ ہوگی

پدماوتی تنازعہ ‘ ملک بھر میں آج 15 منٹ شوٹنگس نہ ہوگی

کیا ہم آزاد ہیں ؟ کیا ہم جمہوری ملک میں رہتے ہیں ؟ فلمی صنعت کی تنظیموں کا سوال
ممبئی 25 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) سنجے لیلا بھنسالی کی تنازعہ میںپھنسی فلم ’ پدماوتی ‘ سے اظہار یگانگت کے طور پر کل سینکڑوں افراد بشمول فلم سازوں اور عام ورکرس نے ملک بھر میں کل 15 منٹ کے بلیک آوٹ کا اعلان کیا ہے ۔ انڈین فلمس اینڈ ٹی وی ڈائرکٹرس اسوسی ایشن نے فلم اور ٹی وی صنعت کی دیگر 19 تنظیموں کے ساتھ مل کر فیصلہ کیا کہ کل 15 منٹ کیلئے فلموں کی شوٹنگ روک دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ یہ احتجاج اختراعی شعبہ سے تعلق رکھنے والوں کی اظہار خیال کی آزادی کا تحفظ کرنے کے مقصد سے کیا جا رہا ہے ۔ انڈین موشن پکچرس پروڈیوسرس اسوسی ایشن ‘ ویسٹرن انڈیا سنیماٹو گرافرس اسوسی ایشن ‘ اسکرین رائیٹرس اسوسی ایشن ‘ دی فلم اینڈ ٹیلی ویژن پروڈیوسرس گلڈ آف انڈیا لمیٹیڈ ‘ اسوسی ایشن آف وائس آرٹسٹس ‘ سنے کاسٹیوم اینڈ میک اپ آرٹسٹ اینڈ ہئیر ڈریسرس اسوسی ایشن اور دوسری تنظیمیں اس احتجاج میں حصہ لیں گی ۔ اس احتجاج کو ’’ میں آزاد ہوں ؟ ‘‘ کا نام دیا گیا ہے ۔ یہ احتجاج کل فلم سٹی میں 3.30 بجے سہ پہر منعقد کیا جائیگا ۔ انڈین فلمس اینڈ ٹی وی ڈائرکٹرس اسوسی ایشن کے کنوینر اشوک پنڈت نے کہا کہ ہندوستان میں ساری فلمی صنعت سے تعلق رکھنے والے 600 – 700 افراد ‘ جن میں فلم ساز اور عام ورکرس بھی شامل ہیں فلم پدماوتی کی تائید میں متحدہ احتجاج کرینگے ۔ احتجاج کرنے والوں میں رائٹرس اور میک اپ مین بھی شامل ہونگے ۔ انہوں نے کہا کہ کل سہ پہر 4.15 بجے سے 4.30 بجے تک سارے ہندوستان میں فلموں کی تمام شوٹنگس روک دی جائیں گی ۔ اس احتجاج کے ذریعہ ہم یہ جاننے کی کوشش کر رہے ہیں کہ کیاہم آزاد لوگ ہیں ؟ ۔ کیا ہم ایک جمہوری ملک میں رہتے ہیں ؟ ۔ فلم پدماوتی کو راجپوت برادری اور کچھ سیاسی قائدین کی مخالفت کا سامنا ہے اور ان کا ڈائرکٹر پر الزام ہے کہ انہوں نے تاریخ کو توڑ مروڑ کر پیش کیا ہے ۔ فلم کے خلاف ملک بھر میں جاری احتجاج کا حوالہ دیتے ہوئے اشوک پنڈت نے کہا کہ اگر بھنسالی جیسے بڑے ڈائرکٹر کو دھمکایا جاسکتا ہے تو پھر ایسا فلمی صنعت میں کسی کے ساتھ بھی ہوسکتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT