Sunday , November 19 2017
Home / Top Stories / پراجکٹس کی بروقت تکمیل کیلئے نیا ’’ورک کلچر‘‘ ضروری

پراجکٹس کی بروقت تکمیل کیلئے نیا ’’ورک کلچر‘‘ ضروری

عدالتی کشاکش ، ٹنڈرس اور احتجاج سے رکاوٹیں ، تیل کی درآمد پر انحصار کم کرنے اقدامات : مودی
پردیپ (اڈیشہ) /7 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) ماضی میں پراجکٹس کی تکمیل میں تاخیر پر شدید تنقید کرتے ہوئے جس کی وجہ سے لاگت میں غیر معمولی اضافہ ہوا ہے ۔ وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ پراجکٹس کی بروقت شروعات اور تکمیل کو یقینی بنانے کیلئے نیا ’’ورک کلچر‘‘ متعارف کیا جانا ہوگا اس سے معاشی ترقی بھی ہوسکے گی ۔ انہوں نے اپوزیشن کانگریس کا یہ الزام بھی مسترد کردیا کہ حالیہ ماہ کے دوران انہوں نے جن پراجکٹس کا افتتاح کیا وہ کانگریس دور حکومت کے ہیں ، مودی نے کہا کہ بحیثیت وزیراعظم انہیں اس وقت خوشی ہوگی جب یہ پراجکٹس پندرہ سال پہلے مکمل کرلئے جاتے اور روزگار کے مواقع فراہم ہوتے ۔ انڈین آئیل کارپوریشن کی  34.555 کروڑ روپئے کی ریفائنری کو قوم کے نام معنون کرتے ہوئے وزیراعظم مودی نے کہا کہ ان کی حکومت تیل کی درآمد پر انحصار کو 2022 ء تک 10 فیصد کم کرنے کے منصوبہ پر عمل کررہی ہے ۔ اس مقصد کے لئے ایسا پالیسی ماحول تیار کیا جارہا ہے جہاں بائیو فیول جیسے اتھنال کو گاڑیوں کے ایندھن کے طور پر استعمال کرتے ہوئے گھریلو پیداوار میں اضافہ کیا جاسکے ۔ یہ ایک فطری امر ہے کہ پراجکٹس کے افتتاح سے انہیں خوشی محسوس ہوئی ہے لیکن ملک کے وزیراعظم کی حیثیت سے وہ بالکل خوش نہیں ہیں ۔ انہیں خوشی اس وقت ہوگی جب یہ پراجکٹس 15 سال پہلے ہی مکمل کرلئے جاتے اور لاکھوں افراد کو روزگار مل پاتا ۔ مودی نے کہا کہ ملک میں پراجکٹس کو عدالتی کشاکش ، ٹنڈرس کا عمل اور بسااوقات احتجاج کا سامنا ہوتا ہے جس سے مصارف بڑھ جاتے ہیں ۔ ملک کی ترقی کے لئے ہی ہم تمام شہریوں ، بیوروکریسی ، انڈسٹری اور پالیسی سازوں کو ملکر ایک نیا کام کا کلچر فروغ دینا ہوگا ۔
جہاں پراجکٹس بروقت ہوں ۔ مقررہ وقت کے مطابق جاری رہیں اور طئے شدہ وقت سے پہلے ہی انہیں مکمل کرلیا جائے ۔ اس طرح ملک کا فائدہ ہوگا اور یہ فائدہ مقررہ وقت سے پہلے ہی ملے گا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اس ضمن میں تبدیلی لانے کی کوشش کررہی ہے اور تاخیر کی بنا سرکاری خزانہ کو زیادہ نقصان نہیں ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ تاخیر بالکل نہیں ہونی چاہئیے ۔ ماضی میں 50 سال پہلے جو تجاویز پیش کی گیئں انہیں کاغذ پر لانے کے لئے دس سال لگ گئے ۔ بہر سنگ بنیاد رکھنے مزید چند سال اور پھر مکمل ہونے تک مزید کئی سال لگ گئے ۔
جگناتھ مندر میں پوجا
وزیراعظم نریندر مودی نے اڈیشہ میں 12 ویں صدی کی لارڈ جگناتھ مندر میں پوجا کی ۔ انہوں نے کہا کہ پوری کے عوام نے جس گرمجوشی کا مظاہرہ کیا وہ اس سے بے حد متاثر ہوئے ۔ وزیراعظم بننے کے بعد ان کا یہاں پہلا دورہ ہے ۔ مندر سے باہر آنے کے بعد انہوں نے یہاں موجود عوام کے استقبال کا ہاتھ لہرا کر جواب دیا ۔ ایک پولیس عہدیدار نے کہا کہ وہ نریندر مودی آہستہ چل رہی گاڑی کے فٹ بورڈ پر ٹھہر کر ہاتھ لہرا رہے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT