Saturday , November 18 2017
Home / جرائم و حادثات / پرانا شہر میں منچلے نوجوانوں کیخلاف پولیس کا ’مشن چبوترہ‘

پرانا شہر میں منچلے نوجوانوں کیخلاف پولیس کا ’مشن چبوترہ‘

ساؤتھ زون پولیس کی جانب سے والدین کی موجودگی میں بچوں کی کونسلنگ، آوارگی کے بجائے تعلیم پر توجہ پر زور
حیدرآباد 23 فروری (سیاست نیوز) پرانے شہر حیدرآباد میں پولیس کے مشن چبوترہ کا دوبارہ آغاز ہوگیا ہے۔ تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ یہ مشن اب ہفتہ میں دو مرتبہ انجام دیا جائے گا۔ مشن کا اہم مقصد نوجوان نسل کو بے راہ روی سے بچانا ہے۔ اس خصوص میں ڈپٹی کمشنر پولیس ساؤتھ زون مسٹر ستیہ نارائنا نے بتایا کہ امتحانات کے پیش نظر چبوترہ مشن کا دوبارہ آغاز کیا گیا ہے اور یہ ہفتہ میں دو دن جاری رہے گا۔ اُنھوں نے بتایا کہ اب چونکہ دسویں ، انٹر اور پی جی امتحانات کی تاریخوں کا اعلان ہوچکا ہے، ایسے میں نوجوان نسل بالخصوص طلبہ برادری کے لئے پرسکون ماحول فراہم کرنا ہے۔ تعلیمی امتحانات کے ساتھ ساتھ مسابقتی امتحانات، پولیس کانسٹبل، سب انسپکٹر اور گروپ II کے امتحانات بھی قریب ہیں۔ ایسے میں تعلیم میں ذرا سی کوتاہی اور خلل مشکلات پیدا کرسکتی ہے۔ ڈی سی پی ساؤتھ زون نے کہاکہ نوجوان نسل کی فلاح و بہبود اور ترقی ہمارا مقصد ہے اور ساؤتھ زون پولیس چاہتی ہے کہ تعلیم یافتہ نوجوان پُرسکون ماحول میں امتحانات کی تیاری کریں۔ انھوں نے کہاکہ بعض غیر سماجی سرگرمیاں اور بعض منچلے نوجوانوں کی حرکتوں کے سبب ہونہار اور باصلاحیت نوجوانوں کا نقصان ہورہا ہے جبکہ ان منچلے نوجوانوں میں کافی صلاحیت ہوتی ہے جس کا وہ استعمال نہیں کرتے۔ انھوں نے کہاکہ منچلے لڑکوں کے سبب ہونہار کا نقصان ہورہا ہے۔ ڈی سی پی ساؤتھ زون نے کہاکہ ایک طرف اقلیتی بہبود پولیس ڈپارٹمنٹ اور روزنامہ سیاست جیسے اداروں کی جانب سے نوجوانوں کی فلاح کے لئے خصوصی تربیتی کلاسیس کا اہتمام کیا جارہا ہے۔ (سلسلہ صفحہ 8 پر)

TOPPOPULARRECENT