Saturday , August 18 2018
Home / Top Stories / پرانا شہر میں میٹرو پراجیکٹ کے عدم آغاز پر پرگتی بھون کے محاصرہ کی دھمکی

پرانا شہر میں میٹرو پراجیکٹ کے عدم آغاز پر پرگتی بھون کے محاصرہ کی دھمکی

اولڈ سٹی میٹرو ریل جوائنٹ ایکشن کمیٹی کی کل جماعتی مہاپدیاترا کو پولیس نے روک دیا، اپوزیشن قائدین کا سخت احتجاج
حیدرآباد۔ 17ڈسمبر (سیاست نیوز، این ایس ایس) پرانا شہر حیدرآباد میں میٹرو ریل پراجیکٹ کے تعمیرات کاموں کا آغاز کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے منظم کردہ کُل جماعتی مہا پدیاترا میں شامل قائدین نے آج الزام عائد کیا کہ ریاست کی مختلف حکومتیں پرانا شہر حیدرآباد کی ترقی کو 1947ء سے مسلسل نظرانداز کرتی رہی ہیں اور دھمکی دی کہ اس علاقہ میں میٹرو ریل پراجیکٹ کے آغاز میں ریاستی حکومت ناکام ہوجاتی ہے تو چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے دفتر پرگتی بھون کا محاصرہ کرلیا جائے گا۔ کل جماعتی مہا پدیاترا میں شامل قائدین چاڈا وینکٹ راؤ (سی پی آئی)، بدم بال ریڈی (بی جے پی) چیروپلی سیتا راملو (سی پی ایم)، راشد شریف (ٹی آر ایس) اولڈ سٹی میٹرو ریل جوائنٹ ایکشن کمیٹی (او سی ایم آر جے اے سی) کے پرچم تلے اس کا اہتمام کیا تھا، جس میں جے اے سی کے دیگر قائدین ای ٹی نرسمہا (سی پی آئی)، آلے بھاسکر (بی جے پی)، جی نرنجن (کانگریس) اور دوسروں نے ہزاروں اخراج کے ساتھ میر چوک سے مہایاترا کا آغاز کیا اور جیسے ہی یہ مارچ اعتبار چوک پہونچا۔ پولیس نے مداخلت کرتے ہوئے انہیں روک دیا۔ کئی قائدین کو حراست میں لے لیا گیا۔ دوران گرفتاری پولیس سے مزاحمت کے سبب کئی افراد معمولی طور پر زخمی بھی ہوئے۔ چاڈا وینکٹ راو نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے دعویٰ کیا تھا کہ حیدرآباد کو وہ عالمی درجہ کے شہر میں تبدیل کردیں گے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ یہ حقیقت نہیں جانتے تھے کہ پرانا شہر میں تاریخی ورثے کی عمارات اور محلات بھی موجود ہیں۔ پرانا شہر کے عوام شکستہ سڑکوں کے سبب روزمرہ تکالیف اور دشواریوں کا سامنا کررہے ہیں۔ بیرونی ممالک اور دیگر ریاستوں کے ہزاروں سیاح روزانہ چارمینار سیر و سیاحت کے لئے آیا کرتے ہیں چنانچہ حکومت کو پرانا شہر کو ترقی دینا ہوگا۔ اس طرح میٹرو ریل پرانا شہر کی اہم ضرورت ہے۔ بدم بال ریڈی نے کہا کہ ایم آئی ایم کے دباؤ سے مجبور ہوکر نظرانداز کررہے ہیں اور عوام ان سب باتوں کو اچھی طرح سمجھ رہے ہیں۔ انہوں نے خبردار کیا کہ پرانا شہر کے عوام حکومت اور جماعت کو سبق سکھائیں گے۔ چیروپلی سیتا راملو اور ای ٹی نرسمہا نے بھی خطاب کیا اور پولیس طاقت کے ذریعہ مہا پدیاترا کو روکنے کی سخت مذمت کی۔ انہوں نے خبردار کیا کہ میٹرو ریل کا کام فی الفور شروع کیا جائے، ورنہ اولڈ سٹی میٹرو ریل جے اے سی اپنی احتجاجی تحریک میں شدت پیدا کرے گی۔ جے اے سی قائدین آلے جیتندر، روپ راج، جی ہری ناتھ گوڑ، تیرا کانتی سریکانت، شمس الدین، راجہ رتنم، الم بھاسکر، پاشم سریندر، وینکٹیش، ساجد شریف، چھایہ دیوی، شاکر بھائی، امرتماں، آمینہ اور دوسروں کو پولیس نے گرفتار کیا تھا۔ بعدازاں ان کی رہائی عمل میں آئی۔

TOPPOPULARRECENT