Thursday , September 20 2018
Home / جرائم و حادثات / پرانا شہر کے سوئمنگ پول میں طالب علم غرقاب

پرانا شہر کے سوئمنگ پول میں طالب علم غرقاب

حیدرآباد ۔ /11 اپریل (سیاست نیوز) پرانے شہر میں غیرقانونی طور پر چلائے جارہے غیرلائسنس یافتہ سوئمنگ پول میں ایک کم عمر طالب علم غرقاب ہوگیا ۔ تفصیلات کے بموجب 14 سالہ محمد سلمان قریشی جو المدینہ اسکول بابا نگر کا ساتویں جماعت کا طالب علم تھا آج شام اپنے دو بھائی محمد غوث قریشی اور ایک رشتہ دار محمد اسلم قریشی کے ہمراہ حافظ بابا نگر سی بلاک میں واقع ایک آٹو گیاریج میں تعمیر کئے گئے سوئمنگ پول میں تیراکی کیلئے گیا ہوا تھا ۔ بتایا جاتا ہے کہ سوئمنگ پول کے انتظامیہ نے 10 روپئے فی گھنٹہ تیراکی کیلئے مقرر کیا تھا۔ سلمان قریشی نے سات فیٹ گہرے سوئمنگ پول میں تیراکی کی کوشش کررہا تھا کہ وہ اچانک غرقاب ہوگیا ۔ اس واقعہ کے بعد سلمان قریشی کو بے ہوشی کی حالت میں سوئمنگ پول سے باہر نکالا گیا اور دواخانہ منتقل کئے جانے پر اسے مردہ قرار دیا گیا ۔ طالب علم کے والد محمد انور قریشی نے کنچن باغ پولیس میں شکایت درج کروائی جس میں سوئمنگ پول انتظامیہ کے خلاف لاپرواہی کا الزام عائد کیا ۔ سب انسپکٹر کنچن باغ نگیش جائے حادثہ پر پہونچ کر وہاں کا معائنہ کیا اور سوئمنگ پول کے مالک امتیاز اور سوپر وائزر الیاس کو فوری حراست میں لے لیا اور سوئمنگ پول کو بند کردیا گیا ۔ پولیس نے بتایا کہ بابا نگر سی بلاک میں چلائے جارہے سوئمنگ پول کو جی ایچ ایم سی کا لائسنس نہیں ہے اور غیرقانونی طور پر چلایا جارہا تھا ۔ پولیس نے طالب علم کی نعش کو دواخانہ عثمانیہ کے مردہ خانہ منتقل کیا اور اس ضمن میں تحقیقات کی جارہی ہیں ۔ پولیس نے ابتدائی تحقیقاتی کے دوران سوئمنگ پول کے سی سی ٹی وی کیمروں کی ریکارڈنگ حاصل کرلی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT