Saturday , July 21 2018
Home / شہر کی خبریں / پرانے شہر حیدرآباد میں پاسپورٹ آفس کے قیام کی مساعی

پرانے شہر حیدرآباد میں پاسپورٹ آفس کے قیام کی مساعی

ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی کا مجوزہ دورۂ دہلی ، اجمیر میں رباط کی اراضی کیلئے چیف منسٹر راجستھان سے ملاقات کا پروگرام

ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی کا مجوزہ دورۂ دہلی ، اجمیر میں رباط کی اراضی کیلئے چیف منسٹر راجستھان سے ملاقات کا پروگرام
حیدرآباد۔/5فبروری، ( سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ جناب محمد محمود علی 9فبروری کو چیف منسٹر راجستھان وسندھرا راجے سندھیا سے ملاقات کرتے ہوئے چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ کا مکتوب حوالے کریں گے جس میں درگاہ حضرت خواجہ معین الدین چشتی ؒ اجمیر شریف کے قریب ایک ایکر اراضی الاٹ کرنے کی خواہش کی گئی ہے۔ تلنگانہ حکومت اس اراضی پر تلنگانہ سے تعلق رکھنے والے زائرین کے قیام کی سہولت کیلئے خواجہ غریب نواز گیسٹ ہاوز تعمیر کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ حکومت نے اس کے لئے 5کروڑ روپئے الاٹ کئے ہیں۔ درگاہ شریف کے قرب و جوار کے علاقے میں اراضی کے الاٹمنٹ کی خواہش کی جائے گی۔ جناب محمود علی نے راجستھان کے محکمہ مال کے اعلیٰ عہدیداروں سے فون پر بات چیت کی اور حکومت کے منصوبہ سے واقف کرایا۔ بتایا جاتا ہے کہ عہدیداروں نے ڈپٹی چیف منسٹر کو بتایا کہ درگاہ کے قریبی علاقہ میں اراضی موجود ہے جس پر تلنگانہ زائرین کیلئے گیسٹ ہاوز تعمیر کیا جاسکتا ہے۔ جناب محمود علی ہفتہ کو نئی دہلی روانہ ہوں گے اور اتوار کو درگاہ حضرت خواجہ معین الدین چشتی ؒ پر حاضری دیں گے اور پیر کے دن چیف منسٹر راجستھان سے ان کی ملاقات ہوگی۔چیف منسٹر تلنگانہ نے تلنگانہ کے زائرین کیلئے گیسٹ ہاوز کی تعمیر سے متعلق مکتوب کو شخصی طور پر چیف منسٹر راجستھان کے حوالے کرنے جناب محمود علی کو ذمہ داری دی ہے۔ جناب محمود علی نے بتایا کہ گیسٹ ہاوز کی تعمیر کے بعد وہاں عہدیدار اور ملازمین کو متعین کیا جائے گا جو انتظامات کی نگرانی کریں گے۔ گیسٹ ہاوز میں قیام کے سلسلہ میں رہنمایانہ خطوط وضع کئے جائیں گے اور حیدرآباد سے گیسٹ ہاوز کے اُمور کی نگرانی کی جائے گی۔ گیسٹ ہاوز میں قیام کیلئے حیدرآباد میں مقرر کردہ عہدیدار یا ادارہ سے مکتوب حاصل کرنا ہوگا۔ جناب محمود علی منگل کو نئی دہلی پہنچیں گے جہاں مرکزی وزراء سشما سوراج اور نجمہ ہبت اللہ سے ان کی ملاقات ہوگی۔ وزیر خارجہ سشما سوراج سے ملاقات کرتے ہوئے وہ حیدرآباد کے پرانے شہر کے علاقے میں پاسپورٹ آفس کی برانچ قائم کرنے کی اپیل کریں گے تاکہ پرانے شہر سے تعلق رکھنے والے افراد کو پاسپورٹ سے متعلق اُمور کی یکسوئی میں سہولت ہو۔ پرانے شہر کی آبادی تقریباً 30لاکھ ہے لیکن پاسپورٹ آفس کا کاؤنٹر اس علاقے میں موجود نہیں جبکہ سکندرآباد، امیرپیٹ اور ٹولی چوکی میں پاسپورٹ آفس کے مراکز قائم کئے گئے ہیں۔ جناب محمود علی سعودی عرب کی حیدرآبادی رباط کے سلسلہ میں بھی وزیر خارجہ سے نمائندگی کریں گے۔ رباط میں قیام سے متعلق تنازعہ کے سبب گزشتہ دو برسوں سے تلنگانہ کے عازمین حج قیام کی سہولت سے محروم ہیں۔ اس تنازعہ کی یکسوئی کے سلسلہ میں مرکز سے مداخلت کی خواہش کی جائے گی۔ جناب محمود علی حیدرآباد میں سعودی عرب کے کونسلیٹ کے قیام کے سلسلہ میں سعودی سفیر سے ملاقات کریں گے۔ سعودی حکام نے سابق میں حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام کا تیقن دیا تھا اس کی تکمیل کیلئے جناب محمود علی سعودی سفیر کی توجہ مبذول کرائیں گے۔ دہلی کے بعد ممبئی میں سعودی کونسلیٹ موجود ہے۔ حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام سے عوام کو کافی سہولت ہوگی۔ مرکزی وزیر اقلیتی اُمور نجمہ ہپۃ اللہ سے ملاقات کرتے ہوئے پری میٹرک اسکالر شپ ، اقلیتیی طلبہ کے ہاسٹلس کی تعمیر، وقف بورڈ کی تقسیم اور اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے سلسلہ میں مرکز سے تعاون کی خواہش کی جائے گی۔ مرکز کی پری میٹرک اسکالر شپ کے سلسلہ میں نشانہ مقرر کرنے کے سبب ہر سال ہزاروں طلبہ اسکالر شپ سے محروم ہورہے ہیں لہذا مرکز سے خواہش کی جائے گی کہ وہ تلنگانہ کے تمام درخواست گذاروںکو اسکالر شپ کی منظوری کو یقینی بنائیں۔ اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے سلسلہ میں مرکز سے گرانٹ یا پھر قرض کی منظوری کی خواہش کی جائے گی تاکہ اوقافی جائیدادوں سے ہونے والی آمدنی اقلیتوں کی فلاح و بہبود پر خرچ کی جاسکے۔ جناب محمود علی نے بتایا کہ اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے سلسلہ میں اسلامک ڈیولپمنٹ بینک نے بھی تعاون سے اتفاق کیا ہے۔ پراجکٹ کی تیاری کے ذریعہ اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کو تلنگانہ میں اوقافی جائیدادوں کی ترقی میں شامل کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT