Saturday , October 20 2018
Home / شہر کی خبریں / پرانے شہر میں فٹ پاتھس کی تعمیر کے لیے رقمی منظوری

پرانے شہر میں فٹ پاتھس کی تعمیر کے لیے رقمی منظوری

جی ایچ ایم سی اسٹینڈنگ کمیٹی کا اجلاس ، 11 منصوبوں کو قطعیت
حیدرآباد۔22فروری (سیاست نیوز) پرانے شہر میں مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے پرانے شہر میں بڑے پیمانے پر سڑکوں کی توسیع کے عمل کو منظوری دیتے ہوئے فٹ پاتھ کی تعمیر کیلئے رقمی منظوری فراہم کی ہے۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے اسٹینڈنگ کمیٹی کے اجلاس میں 11 منصوبوں کو منظوری دی گئی جس میں پرانے شہر میں ترقیاتی منصوبے شامل ہیں۔ اسٹینڈنگ کمیٹی اجلاس میں مسجد حکیم میر وزیر علی تا حسینی علم پولیس اسٹیشن دودھ باؤلی تک سڑک کی توسیع کے منصوبہ کو منظوری دی گئی ہے اور اس سڑک کو 60فیٹ کرنے کا منصوبہ ہے۔ اس کے علاوہ ہمت پورہ تا فتح دروازہ سڑک کی توسیع کے بعد سی سی روڈ اور فٹ پاتھ کیلئے رقمی منظوری کا فیصلہ کیا گیا ہے اور بتایاجاتاہے کہ ہمت پورہ تا فتح دروازہ سڑک کو 80 فیٹ کئے جانے کے بعد منہدمہ حصہ پر فٹ پاتھ کی تعمیر اور سی سی روڈ کی تعمیر کی جائے گی۔حسینی علم پولیس اسٹیشن دودھ باؤلی سے حسینی علم جانے والے سڑک پر سڑک کی توسیع کے بعد فٹ پاتھ اور سی سی روڈ کی تعمیر کیلئے بھی رقمی منظوری کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ فتح دروازہ تا چندو لعل بارہ دری سڑک کو 80 فیٹ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس سڑک کی توسیع کے بعد اس سڑک پر بھی فٹ پاتھ کی تعمیر اور سی سی روڈ کیلئے رقمی منظوری دینے کا فیصلہ کیا جا چکا ہے۔ بالا پور سڑک حافظ بابانگر ڈی آر ڈی او کی سڑک کی توسیع کے بعد اس سڑک پر بھی توسیع کے عمل کی تکمیل کے بعد سی سی روڈ کی تعمیر کیلئے رقمی منظوری فراہم کی گئی ہے اس سڑک کو 60 فیٹ چوڑی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔مئیر مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد مسٹر بی رام موہن کے زیر صدارت اسٹینڈنگ کمیٹی کے اس اجلاس میں مولی کا چھلہ تا حیدرآباد اسلامک اسکول براہ گنگا باؤلی یاقوت پورہ میں ڈرینیج سسٹم کی درستگی کیلئے بھی منظوری دی گئی اس کے علاوہ ضیاء گوڑہ کمیلہ کی تعمیر کے علاوہ دیگر امور بھی اسٹینڈنگ کمیٹی اجلاس کے دوران پیش کئے گئے جنہیں منظور کیا گیا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT