Sunday , June 24 2018
Home / شہر کی خبریں / پرانے شہر میں میٹرو ریل پراجکٹ کے لیے حصول جائیداد میں تیزی

پرانے شہر میں میٹرو ریل پراجکٹ کے لیے حصول جائیداد میں تیزی

مالکین کو نوٹس کی اجرائی ، باہمی بات چیت کے لیے طلب کرنے کی تجویز
حیدرآباد۔8مارچ(سیاست نیوز) پرانے شہر میں میٹرو ریل پراجکٹ کی منظوری کے اعلان کے بعد اب حیدرآباد میٹرو ریل اور مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد جائیدادوں کے حصول کے سلسلہ میں دوبارہ متحرک ہو چکے ہیں اور میٹرو ریل کی زد میں آنے والی جائیدادوں کے مالکین کو نوٹس کی اجرائی عمل میں لائی جانے لگی ہے۔ بتایاجاتا ہے کہ املی بن بس اسٹیشن سے فلک نما براہ دارالشفاء ‘ منڈی میر عالم‘ کوٹلہ عالیجاہ‘ بی بی بازار‘ مغلپورہ‘ سلطان شاہی ‘ ہری باؤلی ‘ شاہ علی بنڈہ اور لال دروازہ کے درمیان سابق میں حصول جائیداد کے لئے جن جائیدادوں کی نشاندہی کی گئی تھی ان جائیدادوں کے مالکین کو از سر نو نوٹس جاری کرتے ہوئے انہیں مذاکرات کے لئے طلب کرنے کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے تاکہ حصول جائیداد کے عمل کے ساتھ ساتھ پراجکٹ کی تفصیل سے بھی انہیں واقف کروایا جا سکے۔ حکومت تلنگانہ نے پرانے شہر میں میٹرو کے پراجکٹ کو منظوری فراہم کرنے کا اعلان کر چکی ہے اور منتخبہ عوامی نمائندے بھی اب پرانے شہر میں میٹرو کی تائید کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کر رہے ہیں کہ حکومت پرانے شہر میں میٹرو راہداری کو یقینی بنانے کے اقدامات کرے۔ پرانے شہر میںمختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے قائدین نے پرانے شہر میں میٹرو ریل پراجکٹ کو یقینی بنانے کے لئے باضابطہ میٹرو ریل جوائنٹ ایکشن کمیٹی کی تشکیل دیتے ہوئے تحریک چلائی تھی جس کے نتیجہ میں حکومت نے پرانے شہر میں میٹرو کی توسیع حسب منصوبہ انجام دینے کا فیصلہ کیا ہے اور کہا جا رہاہے کہ معمولی تبدیلی کے ساتھ اس منصوبہ کو عملی جامہ پہنانے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ حیدرآباد میٹرو ریل کے ذرائع کے مطابق آئندہ ماہ کے اواخر میں حکومت کی جانب سے احکام کی وصولی کے فوری بعد تمام مالکین جائیداد کو نوٹس جاری کردی جائے گی اور حصول جائیداد کا عمل شروع کردیا جائے گا۔ بتایاجاتاہے کہ حیدرآباد میٹرو ریل کی جانب سے سابقہ منصوبہ میں کسی قسم کی ترمیم نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ منتخبہ عوامی نمائندوں کی جانب سے املی بن تا فلک نما اس راہداری میں معمولی تبدیلیوں کی سفارش کی جا رہی ہے جس پر ماہرین میٹرو ریل نے غور کرنے کا تیقن دیا ہے۔ بتایاجاتا ہے کہ ریاستی حکومت کی جانب سے منصوبہ کو منظوری دے دئیے جانے کے بعد ایل اینڈ ٹی نے پرانے شہر کی جن سڑکوں سے میٹرو گذرنے والی ان کی از سر نو پیمائش اور درکار اراضیات کا ریکارڈ تیار کرنا شروع کردیا ہے ۔پرانے شہر میں میٹرو کے تعمیراتی کاموں کے جاریہ سال کے وسط میں شروع کردیئے جانے کا امکان ہے اور کہا جا رہاہے کہ موسم گرما کے اواخر تک پہلے پلر کے لئے کھدوائی کا عمل شروع کردیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT