Sunday , July 22 2018
Home / شہر کی خبریں / پرانے شہر میں ٹریفک مسائل ، سگنلس کی تنصیب ضروری

پرانے شہر میں ٹریفک مسائل ، سگنلس کی تنصیب ضروری

آر ڈی پی پراجکٹ کا حصہ ادا نہ کرنے سے ٹریفک نظام درہم برہم
حیدرآباد۔3اپریل(سیاست نیوز) حکومت کی جانب سے شہر میں ایس آر ڈی پی پراجکٹ کے نام پر کروڑہا روپئے خرچ کرنے کے اعلانات کئے جا رہے ہیں لیکن اس منصوبہ میں پرانے شہر کو حصہ نہ دیئے جانے کے باعث پرانے شہر کے ٹریفک مسائل جوں کے توں برقرار رہنے کا خدشہ ہے۔ شہر کے ٹریفک مسائل سے نمٹنے کے محکمہ ٹریفک پولیس کی جانب سے کی اہم چوراہوں پر سگنل نہ ہونے کے سبب ٹریفک کو باقاعدہ بنایاجانا ممکن نہیں ہے لیکن اگر محکمہ ٹریفک پولیس کی جانب سے پرانے شہر میں صرف چالانات کے بجائے ٹریفک کو باقاعدہ بنانے کے لئے سگنل اور کیمروں کی تنصیب عمل میں لائی جاتی ہے اور اہم چوراہوں پر ٹریفک کے جوان کو تعینات کیا جاتا ہے تو ایسی صورت میں پرانے شہر میں بھی ٹریفک کوباقاعدہ بنایا جا سکتا ہے۔پرانے شہر میں کئی اہم چوراہوں بالخصوص انجن باؤلی ‘ مصری گنج‘ جہاں نما‘ فتح دروازہ‘ بی بی بازار چوراہا اور کئی مقامات ایسے ہیں جہاں بس خدمات بھی ہیں لیکن اس کے باوجود ٹریفک سگنل نظام نہ ہونے کے سبب بے ہنگم ٹریفک ہوا کرتی ہے اسی لئے ضروری ہے کہ ان علاقوں میں ٹریفک نظام کو بہتر بنانے کیلئے اقدامات کئے جائیں اور جن چوراہوں پر ٹریفک سگنل کی اشد ضرورت محسوس کی جا رہی ہے ان چوراہوں پر فوری ٹریفک سگنل کی تنصیب کے اقدامات کئے جاتے ہیں تو ایسی صورت میں پرانے شہر میں بھی ٹریفک نظام کو درست کیا جاسکتا ہے۔دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد میں جہاں محکمہ ٹریفک پولیس کی جانب سے اس بات کی کوشش کی جا رہی ہے کہ شہریوں کو ٹریفک قوعد کا پابند بنایا جائے ان کوششوں کو پرانے شہر میں بھی وسعت دینے کی ضرورت ہے۔ چارمینار ‘ بہادر پورہ ‘ یاقوت پورہ کے علاوہ دیگر حلقہ جات اسمبلی میں جہاں مصروف ترین اہم سڑکیں ہیں ان سڑکوں پر ٹریفک سگنلس کی تنصیب ان علاقوں میں ٹریفک کو باقاعدہ بنانے میں کلیدی کردار ادا کرسکتی ہے۔ انجن باؤلی چوراہا جہاں فلک نما بس ڈپو موجود ہے اور ہر چند منٹ میں اس ڈپو سے بسیں نکلا کرتی ہیں اس چوراہے پر سگنل کی عدم موجودگی کے متعلق مقامی عوام کا کہناہے کہ متعدد مرتبہ اس سلسلہ میں توجہ مبذول کروائی جا چکی ہے کیونکہ بس نکلنے کے وقت اگر ٹریفک بے ہنگم ہوجاتی ہے تو ایسی صورت میں کافی دیر تک چوارہے پر ٹریفک نظام درہم برہم رہتا ہے ۔ اسی طرح فتح دروازہ چوراہے اور بی بی بازار چوراہے پر بھی ٹریفک سگنل سسٹم کی اشد ضرورت محسوس کی جا رہی ہے کیونکہ ان چوراہوں سے بھی بسوں کا گذر ہوتا ہے لیکن ٹریفک سگنل نظام نہ ہونے کے باعث ٹریفک کی صورتحال بے ہنگم ہوا کرتی ہے۔ڈپٹی کمشنرآف پولیس ٹریفک مسٹر کے بابو راؤنے بتایا کہ پرانے شہر میں ٹریفک کو باقاعدہ بنانے کے امور کا جائزہ لیا جا رہاہے اور ان امور کو قطعیت دیتے ہوئے اہم چوراہوں پر سگنل کی تنصیب کے سلسلہ میں اقدامات کئے جائیں گے تاکہ پرانے شہر میں بھی نئے شہر کے طرز پر موٹر سیکل رانوں کو سہولتوں کی فراہمی عمل میں لائی جا سکے ۔انہوںنے بتایا کہ پرانے شہر کے ٹریفک نظام کو درست اور بہتر بنانے کے لئے متبادل راستوں کی نشاندہی اور اہم چوراہوں پر ٹریفک کانسٹبل کی تعیناتی پر بھی غور کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT