Tuesday , May 22 2018
Home / شہر کی خبریں / پرانے شہر کی سڑکوں کی توسیع، 200 کروڑ خرچ کا تخمینہ

پرانے شہر کی سڑکوں کی توسیع، 200 کروڑ خرچ کا تخمینہ

حصول جائیدادوں کی کوشش، ایس آر ڈی پی اسکیم پر عمل آوری

حیدرآباد 4 مارچ (سیاست نیوز) عظیم تر بلدیہ حیدرآباد کی جانب سے ایس آر ڈی پی اسکیم کے تحت مختلف فلائی اوورس اور سڑکوں کی تعمیر کا فیصلہ کیا گیا تھا مگر اب ایس آر ڈی پی اسکیم سے صرف نظر عظیم تر بلدیہ نے پرانے شہر کی مختلف سڑکوں کی توسیع کا فیصلہ کیا ہے اور یہ فیصلہ اس الزام سے بچنے کے لئے کیا گیا ہے کہ ایس آر ڈی پی اسکیم کے تحت تمام کاموں میں پرانے شہر کو نظرانداز کرتے ہوئے نئے شہر میں ہی انجام دیئے جارہے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ پرانے شہر کی مختلف سڑکوں کی توسیع کا فیصلہ کیا ہے اور پرانے شہر کی مختلف تنگ سڑکوں کو 40 ، 60 اور 100 فیٹ پر مشتمل سڑکوں کی حیثیت سے توسیع کی جائے گی جس کی وجہ سے پرانے شہر میں ٹریفک مسائل پر بہت حد تک قابو پایا جاسکتا ہے کیوں کہ اضلاع محبوب نگر، کرنول اور ناگر جنا ساگر کی سمت سے آنے والوں کو شہر کے مختلف علاقوں تک پہونچنے میں کافی مشکلات درپیش ہورہی ہیں۔ واضح ہو کہ شہر کی مساوی ترقی کی مناسبت سے چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ کے علاوہ دیگر ترقیاتی کام انجام دیئے جارہے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ساؤتھ زون میں جملہ 33 سڑکوں کا ترقی سے متعلق پراجکٹ تیار کیا گیا ہے اور اس پراجکٹ پر عمل آوری کے لئے اصل مسئلہ جائیداد حاصل کرنے کا ہے اور عہدیداران اس مسئلہ سے نمٹنے کے اقدامات کررہے ہیں اور پراجکٹ میں شامل 33 سڑکوں کی توسیع کے لئے 200 کروڑ کا تخمینہ لگایا گیا ہے اور اس کیلئے جملہ 4185 جائیدادوں میں سے 1019 جائیدادیں حاصل کی جاچکی ہیں اور مابقی 2147 جائیدادوں کے حصول کی کوشش جاری ہے۔ پرانے شہر کے علاقہ فتح دروازہ تا چندو لا بارہ دری تک 80 فیٹ سی سی روڈ تعمیر کی جائے گی جس کے لئے تخمینی لاگت 5.40 کروڑ ہے اور خانگی جائیدادوں کیلئے 153 کروڑ کے خرچ کے علاوہ ازیں حافظ بابا نگر سی بلاک ڈی آر ڈی او کمپاؤنڈ تک 60 فیٹ سی سی روڈ کی تعمیر کی جائے گی جس کی تخمینی لاگت 5.95 کروڑ ہے اور جائیداد کے حصول کے لئے 105 کروڑ کا اندازہ لگایا گیا ہے۔ مسجد وزیر علی تا دودھ باؤلی پولیس اسٹیشن تک 60 فیٹ سی سی روڈ تعمیر کی جائے گی جس کی تخمینی لاگت 5.13 کروڑ ہے اور خانگی جائیداد کے حصول کے لئے 183 کروڑ کا اندازہ لگایا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT