Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / پرانے شہر کے حساس مقامات پر شرابیوں سے عوام خوف زدہ

پرانے شہر کے حساس مقامات پر شرابیوں سے عوام خوف زدہ

عوام کیا چاہتے ہیں
راہگیر نشانہ ، ناجائز کشیدہ شراب سے تعفن امن کا مسئلہ
حیدرآباد 11 ستمبر (سیاست نیوز) شہریوں کو نشے میں دھت افراد کی ہراسانی سے بچانے کے لئے غیر مجاز شراب کے فروخت کنندگان کے خلاف بڑے پیمانے پر کارروائی کے ذریعہ پرانا پل، حسینی علم، کاروان کی سڑک پر چلنے والوں کو راحت پہنچائی جاسکتی ہے۔ رات دیر گئے شرابی ان سڑکوں پر امن و ضبط کی برقراری میں رخنہ پیدا کرنے کے مرتکب ہورہے ہیں اور رات کے اوقات میں دعوتوں سے واپس ہونے والے خاندانوں کو ہراسانی کے واقعات بھی رونما ہورہے ہیں۔ پرانا پل سے حسینی علم جانے والی سڑک پر بے شمار ایسے افراد جو حالت نشہ میں ہوتے ہیں سڑکوں پر پڑے پائے جارہے ہیں جوکہ نہ صرف ماحول کو پراگندہ کرنے کے موجب بن رہے ہیں بلکہ اُن کی اس حالت کو بہتر بنانے کے لئے کوئی اقدامات نہ کئے جانے کے باعث نشہ کے عادی یہ افراد راہگیروں کو نشانہ بنانے سے بھی گریز نہیں کرتے۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے حدود میں موجود بلدی ڈیویژن پرانا پل کے کئی مسائل ہیں لیکن اس علاقہ کے عوام کا سب سے بڑا مسئلہ پرانے پل کے مخصوص علاقوں میں فروخت ہونے والی ناجائز کشید شراب ہے جوکہ اس علاقہ میں فروخت کی جاتی ہے۔ سابق میں محکمہ آبکاری کی جانب سے اس علاقہ میں فروخت کی جانے والی ناجائز کشید شراب کو روکنے کے اقدامات کئے گئے تھے لیکن اُن میں کوئی بڑی کامیابی حاصل نہیں ہوئی۔ محکمہ پولیس نے نشہ کے عادی افراد پر نظر رکھنے کے لئے پرانا پل کے قریب پولیس آؤٹ پوسٹ قائم کئے تاکہ کسی بھی قسم کی شرانگیزی و چھیڑ چھاڑ نہ ہونے پائے۔ لیکن عموماً یہ دیکھا جارہا ہے کہ نشہ میں دھت افراد پرانا پل کے اطراف و اکناف کی سڑکوں پر پڑے ہوئے ہوتے ہیں جوکہ راہگیروں کے لئے تکلیف کا باعث ہے۔ فاطمہ کالونی (حسینی علم) کے مکین ایک شخص نے بتایا کہ اس علاقہ میں عرصہ دراز سے موجود اس مسئلہ کو حل کرنے کے لئے متعدد مرتبہ نمائندگیاں کی گئیں ، منتخبہ عوامی نمائندوں سے بھی اس کی شکایت کی گئی لیکن کوئی اثر ہوتا نظر نہیں آرہا ہے۔ بلدی ڈیویژن میں سڑکیں بہتر نہ ہونے کے علاوہ اس سنگین مسئلہ کے سبب عوام کو پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ مقامی عوام کا کہنا ہے کہ اگر سنجیدگی سے محکمہ پولیس اور آبکاری کے علاوہ سیاسی قائدین ان علاقوں میں فروخت ہونے والی ناجائز شراب کے اڈوں کو برخاست کرواتے ہیں تو ایسی صورت میں اطراف کے مکینوں کو بڑی راحت حاصل ہوگی۔ مقامی عوام کا کہنا ہے کہ اطراف و اکناف کے علاقوں میں مسائل پیدا کرنے والے شرابی نہ صرف نقص امن کا باعث بن رہے ہیں بلکہ وہ اطراف کے مکانات میں سرقہ کی وارداتوں میں بھی ملوث ہوتے جارہے ہیں۔ نشہ میں دھت افراد کے ہمراہ ہاتھا پائی سے عموماً گریز کیا جاتا ہے جس کا ناجائز فائدہ اُٹھاتے ہوئے نشہ کے عادی افراد معصوم شہریوں کو خوفزدہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ اسی لئے محکمہ پولیس کے علاوہ آبکاری کے عہدیداروں کو چاہئے کہ وہ اس بلدی ڈیویژن میں موجود اس سنگین مسئلہ سے عوام کو راحت دلوانے کے اقدامات کرے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT