Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / پرانے شہر کے 90 روڈی شیٹرس کی کونسلنگ

پرانے شہر کے 90 روڈی شیٹرس کی کونسلنگ

حیدرآباد۔/24ڈسمبر،( سیاست نیوز ) پرانے شہر میں روڈی شیٹرس کی نقل و حرکت اور سرگرمیوں پر مسلسل نظر رکھی جارہی ہے اور عوام میں احساس تحفظ کو فروغ دینے کیلئے غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہونے والے روڈی عناصر کے خلاف سخت کارروائی کی جارہی ہے۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ساؤتھ زون مسٹر وی ستیہ نارائنا نے آج چارمینار ڈیویژن کے پانچ پولیس اسٹیشنوں سے

حیدرآباد۔/24ڈسمبر،( سیاست نیوز ) پرانے شہر میں روڈی شیٹرس کی نقل و حرکت اور سرگرمیوں پر مسلسل نظر رکھی جارہی ہے اور عوام میں احساس تحفظ کو فروغ دینے کیلئے غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہونے والے روڈی عناصر کے خلاف سخت کارروائی کی جارہی ہے۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ساؤتھ زون مسٹر وی ستیہ نارائنا نے آج چارمینار ڈیویژن کے پانچ پولیس اسٹیشنوں سے وابستہ90 روڈی شیٹرس کو اپنے دفتر طلب کرتے ہوئے ان کی کونسلنگ کی۔ بتایا جاتا ہے کہ ڈی سی پی نے چارمینار، کالا پتھر، کاماٹی پورہ ، حسینی علم اور بہادر پورہ کے روڈی شیٹرس کو انتباہ دیا کہ وہ مسلسل غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہونے پر ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ ڈی سی پی نے کونسلنگ کے ذریعہ انہیں واضح طور پر کہا کہ کمشنر پولیس حیدرآباد روڈی عناصر کے خلاف خصوصی مہم جاری رکھے ہوئے ہیں اور اپنی حرکتوں سے باز نہ آنے پر ان کے خلاف پی ڈی ایکٹ لگایا جائے گا جس کے تحت انہیں ایک سال کے طویل عرصہ کیلئے جیل بھیج دیا جائے گا۔انہوں نے روڈی شیٹرس سے بات چیت کی اور بتایا کہ اپنے رکھ رکھاؤ میں سدھار لانے پر ان کی روڈی شیٹ بند بھی کی جاسکتی ہے۔ ساؤتھ زون کے چارمینار ڈیویژن میں جملہ110 روڈی شیٹرس ہیں جبکہ 90 نے آج کونسلنگ میں شرکت کی+

جبکہ بعض روڈی شیٹرس جیل میں موجود ہیں اور دیگر مفرور ہیں۔اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے مسٹر ستیہ نارائنا نے بتایا کہ ساؤتھ زون کے سنتوش نگر، فلک نما اور چارمینار ڈیویژنس کے تمام روڈی شیٹرس کو ان کے دفتر کونسلنگ کیلئے طلب کیا جارہا ہے اور انہیں وارننگ بھی دی جارہی ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ کسی بھی غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہونے یا عوام کو خوفزدہ کرنے والے اقدام میں ملوث ہونے پر متعلقہ پولیس کو روڈی شیٹرس کے خلاف سخت کارروائی کرنے کیلئے تمام انسپکٹران کو ہدایت دی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ آج حسینی علم پولیس نے حمزہ بن عمر عرف ظفر پہلوان کے دو بیٹے سعید اور علی کو موبائیل فون شاپ مالک پر حملہ کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ظفر پہلوان کے دو بیٹوں نے چارمینار بس اسٹیشن کے قریب واقع موبائیل فون شاپ کے مالک رحمن پر موبائیل فون کی تبدیلی سے متعلق بحث کے دوران انہیں شدید زدوکوب کیا تھا جس کے تحت پولیس نے ایک مقدمہ بھی درج کیا تھا۔ آج حسینی علم انسپکٹر نے دونوں کو گرفتار کرتے ہوئے انہیں عدالت میں پیش کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT