Wednesday , June 20 2018
Home / Top Stories / پردہ کی روایت کو ختم کرنا چاہئے : ملائم سنگھ کا شوشہ

پردہ کی روایت کو ختم کرنا چاہئے : ملائم سنگھ کا شوشہ

لکھنو 17 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) سماجوادی پارٹی کے سربراہ ملائم سنگھ یادو نے آج ایک نیا تنازعہ پیدا کردیا اور انہوں نے ’ پردہ ‘ ( نقاب ) کی روایت کو برائی کی روایت قرار دیا اور کہا کہ اس کو ختم کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ اس سے خواتین کی ترقی میں رکاوٹ پیدا ہوتی ہے ۔ ملائم سنگھ یادو سماجوادی پارٹی کی وومنس ونگ کی جانب سے منعقدہ ایک قومی کنون

لکھنو 17 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) سماجوادی پارٹی کے سربراہ ملائم سنگھ یادو نے آج ایک نیا تنازعہ پیدا کردیا اور انہوں نے ’ پردہ ‘ ( نقاب ) کی روایت کو برائی کی روایت قرار دیا اور کہا کہ اس کو ختم کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ اس سے خواتین کی ترقی میں رکاوٹ پیدا ہوتی ہے ۔ ملائم سنگھ یادو سماجوادی پارٹی کی وومنس ونگ کی جانب سے منعقدہ ایک قومی کنونشن سے پارٹی آفس میں خطاب کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ نظام ماضی بعید میں رائج نہیں تھا ۔ کیا کبھی سیتا یا دروپدی نے نقاب کا استعمال کیا تھا ؟ ۔ انہوں نے کہا کہ بعد میں کچھ ایسے حالات پیدا ہوگئے تھے کہ خواتین کو نقاب کا استعمال کرنا پڑا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں خواتین میں احساس کمتری کو ختم کرنے کیلئے کام کرنا چاہئے ۔ ’’ پردہ نظام ‘‘ ایک غلط روایت ہے اور اسے ختم کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اب خواتین یونیفارم ذیب تن کر رہی ہیں اور اب وقت آگیا ہے کہ خود خواتین یہ فیصلہ کریں کہ انہیں پردہ کا نظام ہونا چاہئے یا نہیں ۔ ان کے خیال میں برائی کی اس روایت کو ختم ہونا چاہئے ۔ سماجوادی پارٹی کے سربراہ نے کہا کہ سوشلسٹ لیڈر رام منوہر لوہیا نے ہمیشہ ہی زندگی کے تمام شعبہ جات میں خواتین کی مساوی حصہ داری کی وکالت کی تھی ۔ ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ وقتوں میں خواتین کو مساوی مواقع دئے جانے چاہئیں اور انہیں مردوں کے شانہ بہ شانہ آگے بڑھنا چاہئے ۔ انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ آج کے ترقی یافتہ دور میں بھی خواتین کا سب سے زیادہ استحصال کیا جاتا ہے اور ان کے گھروں میں بھی ان کے ساتھ امتیاز برتا جاتا ہے ۔ اس موقع پر مرکزی حکومت پر بھی تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ یہ غلط باور کرواتے ہیں کہ انہوں نے خواتین کیلئے بہت کچھ کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آپ ہوشیاری یا مکاری سے ووٹ حاصل کرتے ہوئے وزیر اعظم بن سکتے ہیں لیکن اس طرح کی حکمت عملی کے ذریعہ آپ سارے ملک کو بیوقوف نہیں بناسکتے ۔

TOPPOPULARRECENT