Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / پرینکا گاندھی کو یوپی میں انتخابی مہم کی ذمہ داری سونپے جانے کا امکان

پرینکا گاندھی کو یوپی میں انتخابی مہم کی ذمہ داری سونپے جانے کا امکان

جلد فیصلہ کی توقع ۔ شیلا ڈکشت کانگریس کی وزارت اعلی امیدوار ہوسکتی ہیں۔ غلام نبی آزاد نے بلیو پرنٹ سونیا کو پیش کردیا
نئی دہلی 5جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) پرینکا گاندھی کو بہت جلد اتر پردیش میں اسمبلی انتخابات کیلئے کانگریس انتخابی مہم کی روح رواں مقرر کیا جاسکتا ہے جبکہ سینئر لیڈر شیلا ڈکشت کو امکان ہے کہ اس سیاسی طور پر اہمیت کی حامل ریاست میں وزارت اعلی امیدوار کے طور پر پیش کیا جاسکتا ہے ۔ آج اس بات کے اشارے ملنے شروع ہوگئے ہیں کیونکہ کل ہند کانگریس کے قائدین نے کہا کہ اس سلسلہ میں قطعی منظوری صرف پرینکا گاندھی سے ہی ملنے ہی اور اسی کا انتظار کیا جا رہا ہے ۔ علیحدہ طور پر اظہار خیال کرتے ہوئے خود شیلا ڈکشت نے یہ واضح کیا کہ وہ اتر پردیش کی ’ بہو ‘ ہیں اور وہ سیاسی طور پر اہمیت کی حامل اس ریاست میں کوئی بھی رول ادا کرنے تیار ہیں۔ اتر پردیش میں کانگریس امور کے نگران غلام نبی آماد نے جو پارٹی جنرل سکریٹری بھی ہیں پہلے ہی یہ تجویز کیا ہے کہ پرینکا گاندھی کو ساری ریاست میں پارٹی کی انتخابی مہم کی ذمہ داری سنبھالنی چاہئے ۔ آزاد نے ریاست میں وزارت اعلی امیدوار کے اعلان کا بھی امکان ظاہر کیا ہے ۔ آج کانگریس کی پریس کانفرنس کے دوران پارٹی کے ترجمان اعلی رندیپ سرجیوالا سے پرینکا گاندھی کو یو پی میں انتخابی روح رواں بنائے جانے کے امکانات پر مسلسل سوالات کئے گئے ۔ اس کے علاوہ ان سے شیلا ڈکشت کی امیدواری کے تعلق سے بھی سوالات کئے گئے تھے ۔ دونوں ہی امکانات کو مسترد کرنے سے گریز کرتے ہوئے سرجیوالا نے یہ جوابات دئے کہ غلام نبی آزاد نے ریاست اتر پردیش کے تعلق سے بلیو پرنٹ تیار کئے ہیں اور انہیں سونیا گاندھی کے حوالے کردیا ہے ۔

پارٹی جب کبھی کوئی فیصلہ اس تعلق سے کریگی اس کا اعلان کردیا جائیگا ۔ سرجیوالا نے واضح کیا کہ پرینکا گاندھی اب تک امیٹھی اور رائے بریلی کے پارلیمانی حلقوںمیں انتخابی مہم چلاتی رہی ہیں اور ساری ریاست میں پارٹی امیدواروں کی تائید میں مہم چلانے کے تعلق سے فیصلہ انہیں ہی کرنا چاہئے ۔ سرجیوالا نے کہا کہ وہ اس مسئلہ پر کوئی قیاس آرائی نہیں کرینگے ۔ انہوں نے کہا کہ پرینکا گاندھی کے تعلق سے کوئی فیصلہ اگر کیا جاتا ہے اور جب بھی کیا جاتا ہے اس تعلق سے میڈیا کو مطلع کردیا جائیگا ۔ جب نامہ نگاروں نے شیلا ڈکشت سے سوال کیا کہ آیا پرینکا گاندھی اتر پردیش میں کانگریس کی انتخابی مہم میں زیادہ سرگرمی سے مہم چلائیں گی ڈکشت نے کہا کہ پرینکا پارٹی کیلئے بڑا اثاثہ ثابت ہونگی اور ان کا خیر مقدم کیا جائیگا ۔ ڈکشت نے کہا کہ وہ نہیں کہہ سکتیں کہ کیا ہونے والا ہے ۔ ابھی وہ قیاس آرائیوں پر اظہار خیال نہیں کرنا چاہتیں لیکن اگر پرینکا گاندھی پارٹی کی انتخابی مہم کا حصہ بننا چاہتی ہیں تو وہ وہ بڑا اثاثہ ثابت ہونگی اور ان کا خیر مقدم کیا جائیگا کیونکہ وہ اتر پردیش کے حالات سے بخوبی واقف ہیں۔ اپنی پریس کانفرنس میں رندیپ سرجیوالا نے 78 سالہ شیلا ڈکشت کی ستائش کی اور کہا کہ وہ بہت سینئر قائد ہیں اور چیف منسٹر دہلی کی حیثیت سے انہوں نے بہترین کام انجام دئے ہیں۔اس سوال پر کہ آیا انہیں وزارت اعلی امیدوار کی حیثیت سے پیش کیا جائیگا سرجیوالا نے کہا کہ کسی بھی کانگریس لیڈر کے رول اور ذمہ داری کے تعلق سے فیصلہ پارٹی کی صدر اور نائب صدر کرتے ہیں۔ یہ قیاس کیا جا رہا ہے کہ کانگریس کی انتخابی حکمت عملی تیار کرنے والے ماہر پرشانت کشور نے کسی برہمن کو اتر پردیش میں وزارت اعلی امیدوار کے طور پر پیش کرنے کو کہا تھا اور انہوں نے ہی شیلا ڈکشت کے نام کی تجویز پیش

کی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT