Wednesday , June 20 2018
Home / Top Stories / پشاور اسکول قتل عام کا اصل منصوبہ ساز ہلاک

پشاور اسکول قتل عام کا اصل منصوبہ ساز ہلاک

پشاور ۔ /26 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی سکیورٹی فورس نے طالبان کمانڈر کو ہلاک کردیا جس نے پشاور اسکول قتل عام کا منصوبہ بناکر اس کام کیلئے چند درندوں کو روانہ کیا تھا ۔ اس قتل عام میں زائد از 150 افراد ہلاک ہوئے ۔ اس کے بعد دہشت گرد حملے کی ملک بھر میں مذمت کی گئی ۔ یہ حملہ پاکستان کے لئے سب سے صدمہ خیز حملہ تھا ۔ فوج نے پاکستان کے دور د

پشاور ۔ /26 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی سکیورٹی فورس نے طالبان کمانڈر کو ہلاک کردیا جس نے پشاور اسکول قتل عام کا منصوبہ بناکر اس کام کیلئے چند درندوں کو روانہ کیا تھا ۔ اس قتل عام میں زائد از 150 افراد ہلاک ہوئے ۔ اس کے بعد دہشت گرد حملے کی ملک بھر میں مذمت کی گئی ۔ یہ حملہ پاکستان کے لئے سب سے صدمہ خیز حملہ تھا ۔ فوج نے پاکستان کے دور دراز والے خیبر قبائیلی علاقہ میں کارروائی کرتے ہوئے صدام نامی دہشت گرد کو ہلاک کیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ جمعرات کی شب سکیورٹی فور س اور دہشت گردوں کے درمیان گھمسان کی لڑائی ہوئی تھی ۔ یہ علاقہ افغانستان کی سرحد سے متصل ہے ۔ پشاور کے شمال مغربی علاقہ میں گزشتہ ہفتہ ہی یہ ہولناک حملہ کیا گیا تھا ۔ مقامی ایڈمنسٹریشن کے ایک اعلی عہدیدار صاحب علی شاہ نے پشاور میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ کمانڈر صدام ایک خطرناک دہشت گرد تھا جس کو سکیورٹی فورس نے قبائیلی خطہ خیبر کے جمرود ٹاؤن میں فائرنگ کے تبادلے کے دوران ہلاک کردیا ۔ اس کے 6 ساتھی بھی زخمی ہوئے ہیں اور انہیں گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ مقامی عہدیدار نے مزید کہا کہ سمجھا جاتا ہے کہ صدام ہی اسکول پر حملہ کرنے کا ذمہ دار ہے اس نے یہ منصوبہ بنایا تھا ۔ اگر چیکہ اس کے ملوث ہونے یا مبینہ طور پر کارروائی انجام دینے کی صلاحیتوں کا اندازہ نہیں ہوا ہے ۔ حکام فی الحال گرفتار شدہ دہشت گردوں سے پوچھ گچھ کررہے ہیں ۔ صاحب علی شاہ نے صدام کو پاکستان طالبان کا ایک اہم کمانڈر قرار دیا ہے اور وہ کئی حملوں و بم دھماکوں میں سرگرم رہا ہے ۔ صدام اور اس کے ساتھی سکیورٹی فورس پر کئی حملوں میں ملوث ہیں جس کے نتیجہ میں کئی جانی نقصانات ہوئے تھے ۔ طالبان اور دیگر انتہاپسندوں نے خیبر علاقہ میں پناہ لی ہے ۔ شمال وزیرستان میں جون میں ان کے خلاف شروع کردہ بڑے پیمانہ کی فوجی کارروائی کے بعد یہ دہشت گرد خیبر علاقہ کو مشتعل ہونے میں یہاں پر ایک اور علاقہ ہے جہاں 2000 کے اوائیل سے القاعدہ اور طالبان کا گڑھ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT