Friday , November 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / پلاسٹک کے استعمال پر عنقریب پابندی

پلاسٹک کے استعمال پر عنقریب پابندی

ریاستی وزیر رام لنگا ریڈی کا صحافیوں سے خطاب
بنگلورو۔18ستمبر(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ریاستی وزیر برائے ٹرانسپورٹ رام لنگا ریڈی نے جو بنگلور ضلع کے انچارج وزیر بھی ہیں کہاکہ شہر بنگلور میں پلاسٹک پر امتناع عائد کرنے ریاستی حکومت تیار ہے۔ اگلے کابینہ اجلاس میں اس سلسلے میں قطعی فیصلہ لیا جائے گا۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوںنے کہاکہ شہر بنگلور میں روزانہ صرف پلاسٹک کی جو گندگی پیدا ہوتی ہے وہ 25میٹرک ٹن سے زیادہ کی ہوتی ہے، اس کو ختم کرنے کیلئے پلاسٹک پر پابندی ناگزیر ہوچکی ہے۔اس ضمن میں انہوںنے وزیر اعلیٰ سدرامیا سے بات چیت کی ہے۔ کابینہ میں یہ مسئلہ اٹھائے جانے پر اتفاق بھی کیا جاچکا ہے۔ وزیر موصوف نے کہاکہ برہت بنگلور مہانگر پالیکے کی حدود میں جو نئے 110دیہات شامل ہوئے ہیں وہاں پر سڑکوں ، ڈرینج اور ان علاقوں کے تالابوں کی مرمت کیلئے 15کروڑ روپے جاری کئے جا ئیں گے۔ خاص طور پر ان تالابوں میں گندہ پانی جمع نہ ہونے پائے یہ یقینی بنانے کیلئے اس ضمن میں افسران کو خصوصی ہدایت دی جاچکی ہے۔انہوںنے کہاکہ فی الوقت بنگی پورہ علاقہ میں شہر کی گندگی کی نکاسی کا سلسلہ جاری ہے۔ دو ماہ تک یہ سلسلہ جاری رہے گا جس کے بعد بنگی پورہ میں بھی گندگی کی نکاسی بند کردی جائے گی اور اس کی جگہ شہر کے اطراف واکناف قائم ہونے والے سات پروسیسنگ یونٹوں میں گندگی کو ٹھکانے لگایا جائے گا۔ ان میں سے تین یونٹوں نے کام کرنا شروع کردیا ہے۔ باقی چار یونٹوں میں تکنیکی رکاوٹوں کے سبب کام ابھی شروع نہیں ہوپایا ہے۔ اگر ان تمام سات یونٹوں نے کام کرنا شروع کردیا تو ڈھائی ہزار میٹرک ٹن گندگی کی نکاسی کی جاسکتی ہے۔ باقی 1500 ٹن گندگی کی پروسیسنگ کیلئے یونٹوں کا قیام درکار ہے، اس کیلئے اگر نجی فریقین آگے آئیں تو حکومت انہیں موقع فراہم کرنے تیار ہے۔ مسٹر ریڈی نے بتایاکہ یوروپ کے مختلف شہروں میں ایسی پروسیسنگ یونٹیں بغیر کسی رکاوٹ کے ماحولیات کو دھکا لگائے بغیر گندگی کی پروسیسنگ کی جارہی ہے۔اسی طرز پر بنگلور میں بھی گندگی کی پروسیسنگ کرانے کا منصوبہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT