Monday , November 20 2017
Home / ہندوستان / پلانی سوامی اکثریت ثابت کریں: ڈی ایم کے

پلانی سوامی اکثریت ثابت کریں: ڈی ایم کے

اقلیتی حکومت کو بچانے اسمبلی اسپیکر جانبداری سے کام لے رہے ہیں، گورنر سے اسٹالن کی نمائندگی
چینائی 25 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) ڈی ایم کے نے آج گورنر ٹاملناڈو سی ایچ ودیاساگر راؤ سے اپیل کی کہ چیف منسٹر کے پلانی سوامی کو فوری ہدایت دیں کہ 19 آل انڈیا انا ڈی ایم کے ایم ایل ایز کی بغاوت کے تناظر میں اسمبلی میں اپنی اکثریت ثابت کرے اور کہاکہ تاخیر کی صورت میں جوڑ توڑ کا موقع مل سکتا ہے۔ ڈی ایم کے پارٹی کے کارگذار صدر اور اسمبلی میں اپوزیشن کے لیڈر ایم کے اسٹالن نے پلانی سوامی اقتدار کو ’’اقلیتی حکومت‘‘ قرار دیا۔ وہ اِس ہفتے کے اوائل ہی گورنر کو مکتوب تحریر کرتے ہوئے ایوان میں عددی طاقت کی آزمائش پر زور دے چکے ہیں۔ یہاں جاری کردہ ایک بیان میں اُنھوں نے اسمبلی اسپیکر پی دھنپال کی کارروائی پر سوال اُٹھایا کہ اُنھوں نے 19 ایم ایل ایز کو گزشتہ روز گورنمنٹ چیف وہپ کی جانب سے یادداشت پر نوٹسیں جاری کردیئے۔ چیف وہپ نے اِن ایم ایل ایز کو اُن کی مخالف پارٹی سرگرمیوں کی پاداش میں نااہل قرار دینے کی استدعا کی ہے۔ اسٹالن نے کہاکہ وہ گورنر کو پہلے بھی تحریری طور پر آگاہ کرچکے ہیں کہ پلانی سوامی کو اسمبلی میں اکثریت فوری طور پر ثابت کرنے کی ضرورت ہے۔ گورنر کو حکومت کی موجودہ عددی طاقت کا پتہ چلانے کے لئے فوری طور پر اسمبلی کا اجلاس طلب کرنا چاہئے کیوں کہ حاشیے پر کردیئے گئے انا ڈی ایم کے ڈپٹی جنرل سکریٹری ٹی دیناکرن کے وفادار ایم ایل ایز نے منگل کو اُن سے ملاقات کرتے ہوئے پلانی سوامی کی برطرفی کا مطالبہ کیا تھا۔ اسٹالن نے کہاکہ گورنر کو یقینی بنانا چاہئے کہ پلانی سوامی دستوری بحران پیدا کرتے ہوئے اور قانون انسداد انحراف کا بیجا استعمال کرتے ہوئے اپنا اقتدار جاری نہ رکھنے پائیں۔
اسپیکر کی کارروائی کا ذکر کرتے ہوئے اسٹالن نے کہاکہ یہ نوٹسیں اُس معاملے کے سلسلے میں جاری کردیئے گئے جو اسمبلی میں پیش نہیں آیا۔ ڈی ایم کے لیڈر نے کہاکہ اسپیکر نے موجودہ ڈپٹی چیف منسٹر او پنیر سیلوم زیرقیادت گروپ کے خلاف کارروائی نہیں کی جبکہ اُنھوں نے 18 فروری کے اعتماد کے ووٹ میں اُس وقت کے باغی گروپ کی حیثیت سے حکومت کے خلاف ووٹ دیا تھا لیکن اُنھوں نے اب دیناکرن کیمپ کے 19 ایم ایل ایز کو نوٹسیں جاری کردیئے۔ یہ واضح ہے کہ اسپیکر نے یہ اقدام پلانی سوامی کی اقلیتی حکومت کو بچانے کے لئے کیا ہے۔ اس طرح کے حالات میں گورنر کی جانب سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے کی ہدایت دینے میں ایک ایک دن کی تاخیر بھی جوڑ توڑ اور دیگر سیاسی چالبازیوں کیلئے راہ ہموار کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT