Wednesday , January 17 2018
Home / کھیل کی خبریں / پلے آف مرحلے میں داخلہ کیلئے ممبئی انڈینس کو آخری موقع

پلے آف مرحلے میں داخلہ کیلئے ممبئی انڈینس کو آخری موقع

بنگلورو؍ حیدرآباد ۔16 مئی۔(سیاست ڈاٹ کام) انڈین پریمیئر لیگ اپنے آخری مرحلے میں پہنچ چکا ہے اور جاریہ آئی پی ایل سیزن آٹھ کے لیگ مرحلہ کے آج آخری میچس ہیں ۔ آٹھ ٹیموں کے درمیان جملہ 56 لیگ میاچس کھیلے گئے ۔ آج پہلا میچ بنگلور کے چنا سوامی اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا جو رائل چیلنجر بنگلور اور دہلی ڈیرڈیولس کے درمیان ہوگا ۔ حیدرآباد سن را

بنگلورو؍ حیدرآباد ۔16 مئی۔(سیاست ڈاٹ کام) انڈین پریمیئر لیگ اپنے آخری مرحلے میں پہنچ چکا ہے اور جاریہ آئی پی ایل سیزن آٹھ کے لیگ مرحلہ کے آج آخری میچس ہیں ۔ آٹھ ٹیموں کے درمیان جملہ 56 لیگ میاچس کھیلے گئے ۔ آج پہلا میچ بنگلور کے چنا سوامی اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا جو رائل چیلنجر بنگلور اور دہلی ڈیرڈیولس کے درمیان ہوگا ۔ حیدرآباد سن رائیزرس کے ساتھ بارش کی وجہ سے متاثرہ ایک سنسنی خیز میچ میں کامیابی حاصل کرتے ہوئے پرجوش آر سی بی اپنے ہوم گراؤنڈ پر بلند حوصلے کے ساتھ اُترے گی جو پوائنٹس ٹیبل میں 15 پوائنٹس کے ساتھ دوسرے مقام پر ہے اُس کی بھرپور کوشش یہی ہوگی کہ وہ 17 پوائنٹس کے حصول کے ساتھ نمبر دو مقام پر برقرار رہے جبکہ حریف دہلی ڈیرڈیولس کیلئے یہ میچ صرف اپنی ساکھ کو بہتر بنانے کا ایک موقع ہوگا ۔ دہلی ڈیرڈیولس اس سے قبل آر سی بی کو شکست دے چکی ہے اور اس کی کوشش یہی ہوگی کہ آخری میچ میں کامیابی حاصل کرتے ہوئے ٹورنمنٹ کا کامیابی کے ساتھ اختتام کرے۔ دہلی ڈیرڈیولس جس نے گزشتہ میچ میں ٹیبل ٹاپرس چنائی سوپر کنگس کو ایک قریبی مقابلے میں شکست دیتے ہوئے اپنے اعتماد میں اضافہ کیا تھا پھر ایک بار اس جیت میں اہم کردار ادا کرنے والے تجربہ کار فاسٹ بولر ظہیر خان سے امید رکھے گی کہ وہ اس بار شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کریں جس طرح مظاہرہ انھوں نے چینائی سوپر کنگس کے خلاف کیا تھا ۔ آئی پی ایل آٹھ کی نیلامی میں سب سے مہنگے بکے یوراج سنگھ نے اگرچہ ٹیم کو مایوس کیا جبکہ شروع میں اچھی کارکردگی کے بعد کپتان جے پی ڈومنی بھی امید پر کھرے نہیں اترے۔

بولنگ کی بات کریں تو چوٹ سے واپسی کے بعد ظہیر نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے لیکن ٹیم کی بولنگ میں تجربہ کی کمی ہے ۔ دوسری طرف لیگ مرحلہ کا آخری اور 56 واں میچ سن رائیزرس حیدرآباد اور ممبئی انڈینس کے درمیان حیدرآباد کے راجیوگاندھی اسٹیڈیم اُپل پر کھیلا جائے گا تو دونوں ٹیموں کیلئے کامیابی اشد ضروری ہے۔ دونوں ٹیمیں کے اب 13 میچوں سے 14-14 پوائنٹس ہیں اور پلے آف میں جگہ بنانے کے لئے دونوں ہی ٹیموں کو آخری میچ جیتنا ہوگا۔ سن رائیزرس حیدرآباد مسلسل جیت کے ساتھ اچھا مظاہرہ کررہی تھی لیکن کل رات بارش سے متاثرہ میچ میں اسے رائل چیلنجرز بنگلور کے خلاف چھ وکٹ سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ بارش کی وجہ سے میچ تاخیر سے شروع ہوا اور سن رائیزرس نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 11 اوور میں تین وکٹ کے نقصان پر 135 رنز بنائے۔

اس کے بعد ایک بار پھر بارش نے کھیل کو متاثر کیا اور آر سی بی کو چھ اوور میں 81 رن کا نشانہ ملا جو اس نے کرس گیل (35) اور کپتان ویراٹ کوہلی (44*) کی شاندار اننگز کی مدد سے حاصل کر لیا۔ سن رائیزرس کیلئے کپتان ڈیوڈ وارنر اور شکھر دھون کی سلامی جوڑی نے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے جبکہ مڈل آرڈر میں موزیس ہینریس، اوئن مورگن اور لوکیش راہل بھی مفید شراکت دینے میں کامیاب رہے ہیں۔ ڈیل اسٹین، ٹرینٹ بولٹ، بھونیشور کمار، کرن شرما اور آل راؤنڈر ہینریس کی موجودگی میں ٹیم کا بولنگ اٹیک کافی طاقتور ہے۔ حالیہ میچوں میں بھونیشور نے اختتامی اوورز میں شاندار گیند بازی کی ہے۔ سن رائیزرس اپنے ہوم گراؤنڈ پر آخری میچ کو یادگار بنانے اور شائقین کو جو آر سی بی کے ساتھ سن رائیزرس کی شکست سے مایوس تھے ان کو خوشی مہیا کرنے کی مساعی کرے گی اور پلے آف میں جگہ بنانے کیلئے اس کو ممبئی انڈینس سے برابر کا مقابلہ ہے ، جو بھی ٹیم جیتے گی اور اپنا رن ریٹ بہتر رکھے گی

اس کو پلے آف میں مقام مل سکتا ہے ۔ سن رائیزرس حیدرآباد کے ڈیوڈ وارنر 556 رنز بناکر سب سے زیادہ رن بنانے والے کھلاڑی ہیں اور ان کے پاس آرینج کیاپ موجود ہے جبکہ چینائی سوپر کنگس کے ڈی براؤ سب سے زیادہ 19 وکٹ حاصل کرتے ہوئے بہترین بولر کی ’پرپل کیاپ‘ رکھتے ہیں ۔ ممبئی انڈینس کی ٹیم کو سب سے زیادہ چھکے لگانے کا اعزاز حاصل ہے ۔ اس ٹورنمنٹ میں تاحال 600 سے زائد چھکے لگائے گئے ہیں۔ کل 18 مئی کو وقفہ رہے گا اور 19 مئی سے پلے آف میاچس ہوں گے اور پہلے دو مقام پانے والی ٹیموں میں جو جیتے گی وہ راست فائنل کیلئے کوالیفائی ہوگی اور ہارنے والی ٹیم کو ایک اور موقع رہے گا ۔ تیسری اور چوتھی ٹیم میں سے جو بھی ہارے گی ٹورنمنٹ سے باہر ہوجائے گی اور فاتح ٹیم کا پہلے کوالیفائیر میاچ کے ہارنے والی ٹیم سے مقابلہ ہوگا ۔ اس طرح فائنل مقابلہ ہوگا اور فائنل کی فاتح ٹیم اس سیزن کی چمپیئن بنے گی ۔

TOPPOPULARRECENT