Friday , November 24 2017
Home / دنیا / پناما پیپرس : سپریم کورٹ میں روزانہ کی بنیاد پر سماعت

پناما پیپرس : سپریم کورٹ میں روزانہ کی بنیاد پر سماعت

اسلام آباد۔ 4 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کی سپریم کورٹ نے پناما پیپرس انکشافات جس میں وزیراعظم نواز شریف اور ان کے ارکان خاندان کو مبینہ طور پر ملوث پایا گیا ہے، کے خلاف مقدمہ کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یاد رہے کہ پناما پیپرس انکشافات میں اگر وزیراعظم اور ان کے ارکان خاندان واقعتاً ملوث پائے گئے تو اس سے ان کے سیاسی مستقبل پر منفی اثرات مرتب ہوسکتے ہیں۔ پانچ رکنی بینچ جس کی قیادت جسٹس آصف سعید کھوسہ کررہے ہیں، نے تقریباً 2 ہفتوں کے تعطل کے بعد اس کیس کی سماعت کا دوبارہ آغاز کیا اور کہا کہ اب اس کیس کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر کی جائے گی اور اس طرح اپوزیشن پاکستان تحریک انصاف کے قائد عمران خان کے اس مطالبہ کو تقویت حاصل ہوئی ہے کیونکہ عمران بھی نواز شریف کے خلاف عرضداشت داخل کرنے والوں میں شامل ہیں۔
’’جولین اسانج کو معاف کردیجئے‘‘، پامیلا اینڈرسن کا اوباما کو مکتوب
لاس اینجیلس۔ 4 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ’’بے واچ‘‘ جیسے مشہور ٹی وی سیرئیل کی خوبصورت اداکارہ پامیلا اینڈرسن نے امریکی صدر بارک اوباما سے درخواست کی ہے کہ موصوف جولین اسانج کو اس کی غلطی پر معاف کردیں جو اس نے اپنی ویب سائیٹ ’’وکی لیکس‘‘ کے ذریعہ ہیک کی گئی ڈیموکریٹک ای۔میلس کے ذریعہ افشاء کی تھی۔ 49 سالہ ایکٹریس نے اس سلسلے میں اوباما کو ایک مکتوب تحریر کیا ہے جو آئندہ ہفتہ اپنے عہدہ سے سبکدوش ہوجائیں گے۔ اینڈرسن کا مکتوب دراصل ایک آخری کوشش ہے کہ اوباما اگر اسانج کو معاف کردیں تو اسانج کے خلاف ہیکنگ اسکینڈل کی کوئی تحقیقات نہیں ہوگی۔ اپنے مکتوب میں اینڈرسن نے تحریر کیا ہے کہ اوباما چونکہ اپنی میعاد کے آخری ایام سے گزر رہے ہیں، لہذا وہ جولین اسانج کو اگر معاف کردیں تو ایک انتہائی جرأت مندانہ قدم ہوگا۔ ہم آج انفارمیشن والی ٹیکنالوجی کے دور میں ہیں جہاں کسی کے لئے بھی عصری ٹیکنالوجی کے ذریعہ کوئی بھی معلومات حاصل کرنا یا اس کا انکشاف کرنا معمولی سی بات ہے، لہذا اسانج کے خلاف گرانڈ جیوری کی تحقیقات روک دی جائے۔

TOPPOPULARRECENT