Friday , December 15 2017
Home / ہندوستان / پنجاب میں مقدس کتاب کے اوراق کی بے حرمتی کے خلاف پُرتشدد احتجاج

پنجاب میں مقدس کتاب کے اوراق کی بے حرمتی کے خلاف پُرتشدد احتجاج

ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے فائرنگ اور سنگباری کے واقعات میں 9پولیس ملازمین زخمی

موگا۔/13اکٹوبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) فرید کوٹ میں ایک مذہبی مقام کے قریب ایک مقدس کتاب کے پھٹے ہوئے اوراق پائے جانے کے خلاف موضع بتر کلاں میں احتجاج کے دوران آج سنگباری میں 9پولیس ملازمین زخمی ہوگئے جن میں 4کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ زخمیوں میں 2 اسسٹنٹ سب انسپکٹرس اور ایک اسٹیشن ہاوز آفیسر شامل ہیں۔ اگرچیکہ پولیس نے احتجاجیوں کو منتشر کرنے کیلئے طاقت کے استعمال کی تردید کی ہے لیکن احتجاجیوں کا دعویٰ ہے کہ پولیس نے احتجاج کے مقام سے چلے جانے کیلئے دباؤ ڈالا تھا جس کے باعث تصادم کی نوبت آگئی۔ تاہم پولیس نے ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے ہوا میں فائرنگ کی لیکن سرکاری حکام کا ادعا ہے کہ کوئی احتجاجی زخمی نہیں ہوا۔ موگا سے 20کلو میٹر دور موگا۔ برنالہ روڈ پر موضع بتر کلاں میں ہجوم نے ٹریفک روک دیا تاکہ مقدس کتاب کے اوراق کی بے حرمتی کے خلاف احتجاج کیا جائے۔ بعد ازاں سینئر ضلعی عہدیداروں نے ڈپٹی کمشنر پرمیندر سنگھ گل اور ایس ایس پی چرنجیت سنگھ سے مقامی پنچایت کے بزرگوں سے بات چیت کرکے احتجاج ختم کرنے کی کامیاب ترغیب دی۔ مسٹر گل نے بتایا کہ صورتحال اب مکمل قابو میں ہے۔

ضلع فرید کوٹ کے برج جواہر سنگھ گاؤں میں ایک مذہبی مقام کے قریب کل ایک مقدس کتاب کے پھٹے ہوئے صفحات پائے گئے تھے جس کے بعد مقامی لوگوں نے خاطیوں کی گرفتاری کے مطالبہ پر احتجاج شروع کردیا تھا ۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ یہ مقدس کتاب چند دن قبل بھٹڈہ۔ کوٹکاپور روڈ پر واقع ایک مذہبی مقام سے سرقہ کرلی گئی تھی۔ ممکن ہے کہ مسروقہ کتاب کے اوراق پھاڑ کریہاں ڈال دیئے گئے ہوں۔ ڈپٹی چیف منسٹر سکھبیر سنگھ بادل نے کل ریاستی پولیس سربراہ سمیدہ سنگھ سیانی کو ہدایت دی تھی کہ مذکورہ واقعہ کے پس پردہ عناصر کے خلاف سخت کارروائی کی جائے اور عوام سے اپیل کی ہے کہ امن اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی برقرار رکھیں۔ سکھبیر سنگھ جو کہ وزارت داخلہ کا قلمدان بھی رکھتے ہیں کہا کہ مقدس کتاب کی بے حرمتی کا واقعہ ان عناصر کی کارستانی ہے جو کہ پنجاب میں فرقہ وارانہ کشیدگی کی تخم ریزی کرتے ہوئے پرآشوب دور کا احیاء کرنا چاہتے ہیں۔

نکسلائیٹس کے دھماکہ میں
سی آر پی ایف جوان زخمی
رائے پور۔/13اکٹوبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) نکسلائیٹس سے متاثرہ چھتیس گڑھ کے ضلع سکم میں انتہائی ترقی یافتہ آلہ (IED) کے دھماکہ میں ایک سی آر پی ایف جوان شدید زخمی ہوگیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ چشا گوہا۔ سرکوپال جنگل میں یہ واقعہ آج اسوقت پیش آیا جب کانسٹبل ڈی منی اس کی ٹیم یہاں ہیلی کاپٹر کی لینڈنگ کیلئے ہیلی پیاڈ کی صفائی کررہے تھے، کانسٹبل منی یہاں چھپائے گئے دھماکو آلہ کی زد میں آگیا جسے زخمی حالت میں بذریعہ ہیلی کاپٹر جگدلپور منتقل کردیا گیا۔ سنٹرل ریزرو پولیس فورس کے 74ویں بٹالین سے وابستہ یہ کانسٹبل مخالف ماویسٹ مہم میں متعین تھا۔

TOPPOPULARRECENT