Sunday , November 19 2017
Home / Top Stories / پنجاب میں منشیات کے تاجروں کو حکومت کی حوصلہ افزائی

پنجاب میں منشیات کے تاجروں کو حکومت کی حوصلہ افزائی

جالندھر 13 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے پنجاب میں انتخابی بگل بجاتے ہوئے ریاست میں منشیات کے مسئلہ کو انتخابی موضوع بنادیا ہے اور ریاست کی اکالی حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ حقیقت کو تسلیم کرنے تیار نہیں ہے ۔ راہول گاندھی نے الزام عائدکیا کہ اکالی دل حکومت در اصل منشیات کے تاجروں اور کاروباریوں کو تحفظ فراہم کر رہی ہے اور انہیں بچا رہی ہے ۔ راہول گاندھی نے جالندھر میں کانگریس کے ایک دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر پنجاب کا مستقبل بہتر بنانا ہے تو ریاست سے منشیات کی لعنت کو ختم کرنا ہوگا ۔ اکالی حکومت اور خاص طور پر ڈپٹی چیف منسٹر سکھبیر سنگھ بادل نے اس مسئلہ کو 2012 میں ہی موضوع بنانے پر ان کا مضحکہ اڑایا تھا ۔ ان کے اعداد و شمار کے بموجب 70 فیصد نہیں بلکہ 78 فیصد پنجابی نوجوان منشیات کی لعنت کا شکار ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کی حکومت اس مسئلہ کو تسلیم کرنے کو تیار ۱۲نہیں ہے اور پھر وہ چاہتی ہے کہ اس مسئلہ پر بنی ہوئی فلم اڑتا پنجاب پر امتناع عائد کردیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ منشیات کے علاوہ علاوہ میں لا قانونیت اور بیروزگاری بھی عروج پر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ریاست میں کانگریس کو اقتدار مل جاتا ہے تو منشیات کے کاروبار کو جلد سے جلد ختم کردیا جائیگا ۔ انہوں نے ادعا کیا کہ اکالی دل حکومت کی جانب سے پنجاب پولیس کو آزادی نہیں دی جا رہی ہے کہ وہ اس مسئلہ سے نمٹنے اقدامات کرے ۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں اگر کوئی کاروبار ترقی کر رہا ہے تو وہ صرف منشیات کا ہے ۔ اگر کانگریس کو پنجاب میں اقتدار مل جاتا ہے تو وہ ایک قانون سازی کرتے ہوئے منشیات کے تاجروں کی جائیداد قرق کرنے اقدامات کریگی ۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب پولیس کے عہدیدار اس مسئلہ سے نمٹنا چاہتے ہیں اور منشیات کے تاجروں کے خلاف کارروائی کرنا چاہتے ہیں لیکن اکالی دل حکومت کی جانب سے انہیں ایسا کرنے کی اجازت اور آزادی نہیں دی جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب پولیس وہ ہے جس نے دہشت گردی کا کامیابی سے مقابلہ کیا اورا س کو ختم کرنے میں اہم رول ادا کیا ہے ۔ دھرنا کے موقع پر راہول گاندھی پارٹی قائدین کے ساتھ عام صفوں میں بیٹھ گئے وی آئی پی گیلری میں نہیں گئے ۔

TOPPOPULARRECENT