Saturday , November 18 2017
Home / Top Stories / پنجاب میں پرتشدد جھڑپیں،2 نوجوان ہلاک اور 75 افراد زخمی

پنجاب میں پرتشدد جھڑپیں،2 نوجوان ہلاک اور 75 افراد زخمی

مقدس کتاب کی بے حرمتی کے خلاف سڑکوں پر احتجاج ۔ پولیس کی فائرنگ اور آنسو گیس شیل کا استعمال

فرید کوٹ ۔ /14 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) پنجاب میں ایک مقدس کتاب کی مبینہ بے حرمتی کے خلاف اضلاع فرید کوٹ ، موگا اور سنگور میں پرتشدد احتجاج کے دوران 2 افراد ہلاک اور دیگر 75 بشمول ایک انسپکٹر جنرل پولیس زخمی ہوگئے ۔ سب سے بڑا تصادم فرید کوٹ سے 20 کلو میٹر دور واقع بہبل کلاں گاؤں میں احتجاجیوں اور پولیس کے درمیان پیش آیا ۔ جہاں سے سکھوں کی مختلف تنظیموں بشمول شدت پسندوں نے سڑکوں پر آمد و رفت کو روک دیا تھا ۔ پولیس پارٹی جب بہبل کلاں گاؤں کے قریب سڑک پر بیٹھے ہوئے بعض کارکنوں کو زبردستی اٹھانے کی کوشش کی تو احتجاجیوں کے ساتھ تصادم ہوگیا اور جس پر سنگباری کردی گئی ۔ پولیس نے بھی حفاظت خود اختیاری میں ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے آنسو گیس کے شیل اور آبی توپوں کا استعمال کیا ۔ ضلع فرید کورٹ کے سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ مسٹر سکھویندر سنگھ نے بتایا کہ اس تصادم میں 20 سال عمر کے 2 نوجوان ہلاک اور دیگر کئی افراد زخمی ہوگئے ۔ اگرچیکہ صورتحال کشیدہ لیکن قابو میں ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع کے کوٹکاپور میں بھی پولیس اور احتجاجیوں کے درمیان زبردست جھڑپ ہوئی ۔

بھٹنڈازون آئی جی پی مسٹر جے کے جین اور دیگر 75 افراد زخمی ہوگئے ۔ ان میں 4 کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے ۔ تاہم زخمیوں میں جملہ 15 پولیس ملازمین شامل ہیں ۔ اضلاع سنگھور اور موگا میں بھی احتجاجیوں اور پولیس کے درمیان جھڑپوں کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں ۔ جبکہ پولیس نے تشدد پر آمادہ ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے فائرنگ ، آبی توپوں اور آنسو گیس شیل کا استعمال کیا ۔ یہ احتجاج دو یوم قبل ایک مقدس کتاب کے پھٹے ہوئے اوراق پائے جانے کی اطلاع پر شروع کیا گیا ہے اور یہ ایک مقام تک محدود تھا ۔ لیکن آج پنجاب کے کئی ایک اضلاع تک پھیل گیا ۔ پرتشدد جھڑپوں کے پیش نظر اضلاع ، فرید کوٹ ، موگا ، مالنا ، بھٹنڈا اور سنگور میں امن و قانون کی برقراری کیلئے پولیس کی بھاری جمعیت متعین کردی گئی ہے ۔ جبکہ چیف منسٹر پرکاش سنگھ بادل اور ڈپٹی چیف منسٹر سکھبیر سنگھ بادل نے اشرار کے خلاف کارروائی کا تیقن دیا اور عوام سے امن اور ہم آہنگی برقرار رکھنے کی اپیل کی ہے۔ دریں اثنا مقدس کتاب کی بے حرمتی کے خلاف آج سکھ برادری کے احتجاج سے سب سے زیادہ ضلع سنگور متاثر رہا ۔ جہاں پر سکھ تنظیموں نے بھوانی نگر میں سنگور میں پٹیالہ روڈ مستوانہ میں سنگور ۔ برنالہ روڈ ، سنگور میں سنگور ۔ دھوری روڈ ، سونم کے قریب آئی ٹی چوک اور شیرون چوک ۔ ملوال گاؤں میں دھواں، برنالہ روڈ اور شیر پورہ کے قریب کیٹرون روڈ پر راستہ روکو احتجاج کرتے ہوئے ٹریفک کو مسدود کردیا ۔ علاوہ ازیں مالیر کوئلہ ، لدھیانہ روڈ اور سنگور ۔ دہلی ہائی وے پر بھی احتجاجی مظاہرے کئے گئے ۔

مجالس مقامی کے انتخابات میں شادی سے قبل ہی خاتون کا پرچہ نامزدگی داخل
کولم ۔ 14 ۔ اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) کیرالا میں آئندہ ماہ منعقد ہونے والے مجالس مقامی کے انتخابات میں مقابلے کے خواہشمند ایک امیدوار نے شادی کا راستہ اختیار کیا ہے کیونکہ وہ جس حلقہ سے مقابلہ کرنا چاہتا ہے وہ خواتین کیلئے محفوظ کردیا گیا لیکن وہ مایوس ہونے کی بجائے اپنی دیرینہ خواہش کی تکمیل کیلئے ایک خاتون کا انتخاب کرلیا ہے جہاں سے یہ خاتون شادی سے قبل ہی اس کی شریک حیات بن کر پرچہ نامزدگی داخل کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT