Saturday , June 23 2018
Home / کھیل کی خبریں / پنجاب ناقابل شکست راجستھان کیخلاف روِش بدلنے کوشاں

پنجاب ناقابل شکست راجستھان کیخلاف روِش بدلنے کوشاں

میکسویل کا ہندوستان میں بدستور ناکام ہونا باعث تشویش ۔ راجستھان کیلئے اجنکیا ٹھوس طاقت

میکسویل کا ہندوستان میں بدستور ناکام ہونا باعث تشویش ۔ راجستھان کیلئے اجنکیا ٹھوس طاقت
احمدآباد ، 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) جدوجہد سے دوچار کنگس الیون پنجاب کو واحد ناقابل شکست ٹیم راجستھان رائلز کے خلاف تمام تر رکاوٹیں عبور کرنی ہوں گی، جب یہ دونوں ٹیمیں انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل)میں کل یہاں مسابقت کریں گی۔ راجستھان رائلز نے وہ تمام چیلنجوں سے بخوبی نمٹا ہے جو ابھی تک کھیلے گئے اُن کے پانچ مقابلوں میں درپیش آئے ہیں۔ ان میں سے چار کامیابیاں ٹارگٹ کا تعاقب کرتے ہوئے درج ہوئیں، جن میں کل یہاں پُراستقلال ٹیم چینائی سوپر کنگس کے خلاف حاصل کردہ جیت سب سے زیادہ اطمینان بخش ہے۔ انھوں نے 157 کے ٹارگٹ کا کچومر نکال دیا جیسا کہ اوپنرز اجنکیا رہانے اور شین واٹسن نے 144 رنز کی تیزرفتار رفاقت 97 گیندوں میں نبھائی۔ کنگس الیون پنجاب کو کوئی راستہ تو تلاش کرنا پڑے گا کہ رہانے کو کسی طرح روکا جائے، جو 231 رنز بہ اوسط 57.75 کے ساتھ اس ٹورنمنٹ کے سب سے نمایاں اسکورر ہیں۔ یہ بات کہ گیند سے کوئی بہت نمایاں مظاہرہ نہیں ہوا ہے، یہ ظاہر کرتی ہے کہ رائلز ایک یونٹ کے طور پر اچھی کارکردگی پیش کررہے ہیں۔ لیگ اسپنر پراوین تامبے ان کے سب سے کامیاب بولر ثابت ہوئے ہیں جنھوں نے پانچ وکٹیں اتنے ہی میچز میں بہ اوسط 23 اور 6.76 کی معقول شرح پر لئے ہیں۔ جہاں کنگس الیون پنجاب نے ابھی تک بولنگ کے شعبے میں واجبی مظاہرہ پیش کیا ہے، یہ اُن کی شہرت یافتہ بیٹنگ لائن اپ ہے جس نے انھیں مایوس کیا ہے۔ گزشتہ سال کے رنرزاپ نے اس سیزن معمولی شروعات کی جیسا کہ چار مقابلوں سے صرف ایک جیت حاصل کی۔ جو چیز اُن کیلئے مشکل بن رہی ہے وہ یہ کہ ویریندر سہواگ اور مرلی وجئے کی خطرناک ابتدائی جوڑی اچھی شروعات کو آگے بڑھانے سے قاصر رہی ہے۔ گزشتہ میچ میں کے کے آر کے خلاف جارحانہ بیٹسمن ڈیوڈ ملر کو ڈراپ کرکے آل راؤنڈر تھسارا پریرا کو شامل کرنا بھی کارآمد نہ ہوا۔ سب سے بڑی فکرمندی تو لازماً گلن میکسویل کا فام ہی ہونا چاہئے، جو ہندوستان میں بدستور مشکل محسوس کررہے ہیں۔ وہ مجموعی طور پر محض 61 رنز بہ اوسط 15.25 بنائے ہیں اور ٹیم کو اس آسٹریلیائی سے کچھ زیادہ کی توقع ہے، جو حالیہ ورلڈ کپ میں عمدہ فام میں رہے اور گزشتہ سال آئی پی ایل کے یو اے ای مرحلے میں پنجاب کے اسٹار ثابت ہوئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT