Tuesday , October 16 2018
Home / ہندوستان / پنجاب نیشنل بینک کے بعد روٹومیک کا 3,695 کروڑ کا نیا اسکام

پنجاب نیشنل بینک کے بعد روٹومیک کا 3,695 کروڑ کا نیا اسکام

بینکنگ شعبہ میں اُتھل پُتھل ۔ پی این بی اسکام میں اُپل امبانی اور دیگر سے تفتیش ، 5,694 کروڑ روپئے مالیتی ہیرے ، زیورات ضبط
نئی دہلی ۔19 فبروری ۔(سیاست ڈاٹ کام) نیرو مودی اور پنجاب نیشنل بینک اسکینڈل کے بعد بینکنگ کے شعبہ میں ایک اور نیا بڑا گھوٹالہ منظرعام پر آیا ہے ۔ یہ وکرم کوٹھاری پروموٹر روٹومیک پن کا 3,695 کروڑ روپئے بینکوں سے حاصل کرنے کا گھوٹالہ ہے جس کی وجہ سے مرکزی تحقیقاتی محکمہ اُن کے خلاف ایک مقدمہ درج کرنے ، اُن سے تفتیش اور کانپور میں اُن کی قیامگاہ کی تلاشی لینے پر مجبور ہوگئے ۔ سی بی آئی اور ای ڈی پہلے ہی سے پنجاب نیشنل بینک کی دو شکایتوں کی تحقیقات میں مصروف ہیںجو ارب پتی جوہری نیرو مودی اور اُن کی زیورات کی کمپنی کے خلاف ہیںجنھوں نے دھوکہ دہی کے ذریعہ 11,400 کروڑ روپئے کے قرضہ جات بینکوں سے حاصل کئے تھے ۔ روٹو میک مقدمہ میں ملوث بینک جن میں پی بی آئی اور ای ڈی نے علحدہ علحدہ مقدمہ درج کئے ہیں بینک آف بڑودہ (456.53 کروڑ روپئے ) اور بینک آف انڈیا (754.77 کروڑ روپئے ) ، بینک آف مہاراشٹرا (49.82 کروڑ روپئے ) ، الٰہ آباد بینک (330.68 کروڑ روپئے ) ، اورینٹل بینک آف کامرس (97.47 کروڑ روپئے ) ، انڈین اوورسیز بینک (771.07 کروڑ روپئے ) اور یونین بینک آف انڈیا (458.95 کروڑ روپئے ) شامل ہیں۔ سی بی آئی نے کہاکہ ملزمین نے سات بینکوں کے ایک کنسورشیم کو دھوکہ دے کر 2919 کروڑ روپئے کے قرضہ جات بلا سودی اور بینک چارجس جملہ بقایہ رقم حاصل کئے تھے اور طمانیت کے طورپر 3695 کروڑ روپئے حاصل کئے تھے ۔ اس خبر سے اسٹاک مارکیٹ دہل کر رہ گئی۔ یونین بینک کے حصص میں 8.50 فیصد گراوٹ آئی ۔ بینک آف بڑودہ کے حصص 5.48 فیصد کم ہوگئے ۔ بینک آف انڈیا کے حصص میں 4.07 فیصد گراؤٹ آئی اور اس کے بعد الہٰ آباد بینک (3.45 فیصد ) کا مقام ہے اور اورینٹل بینک آف کامرس (1.80 فیصد ) ، بینک آف مہاراشٹرا (1.25فیصد ) اور انڈین اوورسٹیز بینک (0.60 فیصد ) گراوٹ کے ساتھ ہیں۔ پی بی آئی کا مقدمہ بینک آف بڑودہ کانپور کی جانب سے روٹومیک گلوبل پرائیویٹ لمیٹیڈ اور اس کے ڈائرکٹر وکرم کوٹھاری ، اُن کی بیوی سادھنا کوٹھاری اور فرزند راہول کوٹھاری اور نامعلوم بینک عہدیداروں کے خلاف درج کیا گیا ۔ قانون تعزیراتِ ہند کی مختلف دفعات کے تحت جن کا تعلق زدوکوب ، جعلسازی اور انسداد بدعنوانی قانون سے ہے درج کئے گئے ہیں۔ مقدمہ درج کرنے کے فوری بعد سی بی آئی نے کانپور میں تین مقامات پر تلاشی لی جس میں کوٹھاری کی قیامگاہ اور دفتر کا احاطہ بھی شامل ہے ۔ سی بی آئی کے ترجمان نے کہا کہ محکمہ کوٹھاری اور اُن کی بیوی اور بیٹے سے تفتیش کررہا ہے ۔ اس کارروائی کے ساتھ ساتھ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ کے شعبۂ تحقیقات نے بھی وزارت فینانس کے تحت اپنی کارروائی جاری رکھے ہوئے ہے۔ روٹو میک پنس اور اس کے پروموٹرس کے خلاف رقومات کی غیرقانونی منتقلی کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے ۔ سی بی آئی اور ای ڈی کے ملزمین مشترک ہیں ۔ اسکام میں ملوث نیرو مودی کا نام بمشکل 15 دن قبل منظرعام پر آیا تھا جس کی وجہ سے بینکنگ کا شعبہ دہل کر رہ گیا تھا ۔ جوہری اور اُن کے انکل میہول چوکسی کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے دھاوے کئے گئے ۔ ای ڈی نے 22کروڑ روپئے مالیتی زیورات ضبط کئے ۔ محکمہ انکم ٹیکس نے سات جائیدادوں کو قرق کرلیا ۔ سی بی آئی نے چار سینئر کمپنی عہدیداروں سے تفتیش کی ۔ مرکزی ویجلنس کمشنر کے وی چودھری بھی سرگرم ہوگئے ، انھوں نے پنجاب نیشنل بینک اور وزارت فینانس کے عہدیداروں سے ملاقات کی جو 400 کروڑ روپئے مالیتی دھوکہ دہی مقدمہ کے بارے میں تھی ۔ ای ڈی کے سربراہ کرنل سنگھ ممبئی سے بذریعہ طیارہ پہونچے تاکہ اس دھوکہ دہی سے متعلق تحقیقات کا جائزہ لے سکیں۔ 22کروڑ روپئے مالیتی زیورات کی ضبطی کے ساتھ جواہرات اور زیورات کی ضبطی کی جملہ مالیت 5671 کروڑ روپئے ہوچکی ہے ۔ تحقیقاتی محکمہ نے دیگر 38 مقامات پر بھی تلاشی لی جو مختلف شہروں بشمول ممبئی ، پونے ، اورنگ آباد ، تھانے ، کولکاتہ ، دہلی ، جموں ، لکھنو ، بنگلورو اور سورت میں واقع ہیں ۔ کئی محکموں کی تحقیقات کے ایک حصہ کے طورپر محکمہ انکم ٹیکس نے آج گیتانجلی گروپ کی جائیدادوں اور اُس کے پروموٹرس میہول چوکسی کی جائیدادوں کو ممبئی میں قرق کرلیا ۔ سی بی آئی نے آج وپل امبانی صدر (فینانس ) مودی فائر اینڈ ڈائمنڈس ، روی گپتا چیف فینانشیل آفیسر اور سورت شرما اور سریش سرب سے بھی تفتیش کی ۔ سمجھا جاتاہے کہ امبانی انجہانی صنعت کار دھیرو بھائی امبانی کے رشتہ دار ہیں۔ سی بی آئی کے ترجمان کے بموجب پنجاب نیشنل بینک براڈی روڈ برانچ کو آج صبح مختصر وقفہ کے لئے مہربند کردیا گیا تاکہ کسی بھی امکانی ٹائمپرنگ کا انسداد کیا جاسکے ۔ بعد ازاں دن میں بینک کھول دیا گیا ۔ تحقیقاتی محکمہ نے دیگر 13 پنجاب نیشنل بینک کی شاخوں میں بھی تحقیقات کی ۔ جنرل منیجر سطح کے عہدیداروں سے تفتیش کی گئی ۔ تحقیقاتی محکمہ نے کہا کہ محکمہ اب بھی بینک عہدیداروں سے تفتیش اور اُن کی گرفتاریوں میں مصروف ہے ۔ ریٹائرڈ جی شیٹی اور منوج کھرپ سے بھی تفتیش کی گئی ہے ۔ ہیمنت بھٹ جنھوں نے نیرو مودی کمپنی کے دستاویزات پر دستخط کئے تھے ، اُن سے بھی مبینہ اسکام کے سلسلے میں اور اس کی شدت کے بارے میں تفتیش کی گئی ۔ ذرائع کے بموجب پنجاب نیشنل بینک کے حصص میں زبردست کمی واقع ہوئی اور یہ 197 روپئے سے گزشتہ چند دن کے دوران 113 روپئے ہوگیا۔

TOPPOPULARRECENT