Sunday , June 24 2018
Home / دنیا / پوتن کے دورہ کریمیا پر امریکہ اور یورپ برہم

پوتن کے دورہ کریمیا پر امریکہ اور یورپ برہم

واشنگٹن / بروسیلس۔ 10 مئی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے روسی صدر ولادی میر پوتن کے یوکرین سے علیحدہ ہو کر روس میں شامل ہونے والے جزیرہ نما علاقے کرائمیا کے دورے کو اشتعال انگیز اور غیر ضروری قرار دیا ہے۔اس سال مارچ میں کرائمیا کی یوکرین سے علیحدگی کے بعد روسی صدر کا کرائمیا کا یہ پہلا دورہ تھا۔ کرائمیا میں روسی صدر نے 1945 ء میں نازی جرمنی

واشنگٹن / بروسیلس۔ 10 مئی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے روسی صدر ولادی میر پوتن کے یوکرین سے علیحدہ ہو کر روس میں شامل ہونے والے جزیرہ نما علاقے کرائمیا کے دورے کو اشتعال انگیز اور غیر ضروری قرار دیا ہے۔اس سال مارچ میں کرائمیا کی یوکرین سے علیحدگی کے بعد روسی صدر کا کرائمیا کا یہ پہلا دورہ تھا۔ کرائمیا میں روسی صدر نے 1945 ء میں نازی جرمنی کے خلاف فتح کی سالگرہ کے موقع پرسیواستوپول کی بندرگاہ پر روسی بحریہ کے سیلروں سے خطاب یورپی یونین نے بھی روسی صدر کے کرائمیا کے دورے کی پرزور مذمت کی ہے اس کے علاوہ یوکرین نے اس دورے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے ملکی خودمختاری کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔

امریکہ کے محکمۂ خارجہ کی ترجمان جین پساکی نے روسی صدر کے کرائمیا کے دورے کو اشتعال انگیز اور غیر ضروری قرار دیتے ہوئے کہا کہ کرائمیا یوکرین کا حصہ ہے اور ہم روس کے غیرقانونی طریقۂ کار اور ناجائز اقدامات کو تسلیم نہیں کرتے ہیں۔دوسری جانب یورپی یونین کی خارجہ امور کی نگران کیتھرین ایشٹن کی ترجمان نے کہا ہے کہ یورپی یونین کو صدر پوتن کی کرائمیا میں ایک فوجی پریڈ میں موجودگی پر افسوس ہے۔نیٹو کے سیکریٹری جنرل آئیرس فو راس موسن نے بھی روسی صدر کے دورے کو غیر مناسب قرار دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT