Thursday , December 13 2018

پورندیشوری کا بی جے پی میں شمولیت کا امکان

حیدرآباد /5 مارچ (سیاست نیوز) ریاست کی تقسیم کے خلاف مرکزی وزارت اور کانگریس کی رکنیت سے مستعفی ہونے والی پورندیشوری نے 6 مارچ کو اپنے حامیوں کا اجلاس طلب کیا ہے۔ واضح رہے کہ بانی تلگودیشم آنجہانی این ٹی آر کی دختر پورندیشوری ریاست کی تقسیم اور ان کی جانب سے پیش کردہ تجاویز پر عمل کرنے پر بطور احتجاج مرکزی وزارت اور کانگریس پارٹی سے م

حیدرآباد /5 مارچ (سیاست نیوز) ریاست کی تقسیم کے خلاف مرکزی وزارت اور کانگریس کی رکنیت سے مستعفی ہونے والی پورندیشوری نے 6 مارچ کو اپنے حامیوں کا اجلاس طلب کیا ہے۔ واضح رہے کہ بانی تلگودیشم آنجہانی این ٹی آر کی دختر پورندیشوری ریاست کی تقسیم اور ان کی جانب سے پیش کردہ تجاویز پر عمل کرنے پر بطور احتجاج مرکزی وزارت اور کانگریس پارٹی سے مستعفی ہو چکی ہیں اور گزشتہ دو ہفتوں سے انھوں نے خود کو کانگریس کی سرگرمیوں سے دور رکھا ہے، تاہم الیکشن کمیشن کی جانب سے انتخابی اعلامیہ کی اجرائی کے بعد انھوں نے اپنے حامیوں کا اجلاس طلب کیا ہے۔ ذرائع کے بموجب تلگودیشم اور بی جے پی کے علاوہ لوک ستہ نے ان سے ربط پیدا کرتے ہوئے اپنی اپنی جماعتوں میں شامل ہونے کی پیشکش کی ہے۔ واضح رہے کہ پورندیشوری اور ان کے شوہر ڈی وینکٹیشورلو کانگریس کے ٹکٹ پر منتخب ہوئے ہیں، جو ماضی میں بی جے پی میں شامل تھے۔ صدر تلگودیشم چندرا بابو نائیڈو سے ان کے اختلافات برقرار ہیں، جب کہ ان کے بھائی فلم اسٹار بالا کرشنا انھیں تلگودیشم میں شامل ہونے کا مشورہ دے رہے ہیں، تاہم ذرائع کے بموجب پورندیشوری اور ان کے شوہر بی جے پی کو ترجیح دے رہے ہیں اور کل اپنے حامیوں سے ملاقات کے بعد اپنے سیاسی مستقبل کا اعلان کریں گے۔ ذرائع کے بموجب بی جے پی قائد ایم وینکیا نائیڈو اور دیگر سینئر قائدین مسز پورندیشوری سے رابطہ بنائے ہوئے ہیں۔

سیما آندھرا کیلئے مرکزی اعلانات پر سخت اعتراض
تلنگانہ کو نظر انداز کرنے کا الزام ، سی ایچ ودیا ساگر راؤ کا بیان
حیدرآباد ۔ 5 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : بی جے پی قائد سی ایچ ودیا ساگر راؤ نے مرکزی وزیر جئے رام رمیش کی جانب سے سیما آندھرا علاقے کے متعلق اعلانات پر سخت اعتراض جتایا اور کہا کہ اس سے تلنگانہ عوام کے ذہنوں میں اسی طرح کا تاثر پیدا ہوگا کہ علاقہ تلنگانہ کو نظر انداز کیا جارہا ہے ۔ یہاں ایک پریس کانفرنس کے دوران ودیا ساگر راؤ نے بتایا کہ جئے رام رمیش کی جانب سے سیما آندھرا کے دورہ کے دوران علاقے کے لیے خصوصی موقف کے وہ مخالف نہیں ہیں تاہم ایسا محسوس ہورہا ہے کہ تلنگانہ کو نظر انداز کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس سیما آندھرا کو فکسڈ ڈپازٹ جب کہ تلنگانہ کو جوائنٹ اکاونٹ سمجھ رہی ہے ۔ اس طرح کا رویہ نا مناسب ہے ۔ انہوں نے انتخابات کے اعلان پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی ملک میں اکثریت حاصل کرے گی ۔ انہوں نے پولاورم پراجکٹ کی وجہ سیما آندھرا علاقے کو زائد سات منڈلس کی حوالگی پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ اس سے قانونی و دستوری مسائل پیدا ہوں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT