Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / پولیس میں 10ہزار سے زائد جائیدادوں پر عنقریب تقررات

پولیس میں 10ہزار سے زائد جائیدادوں پر عنقریب تقررات

4فیصد تحفظات پر عمل آوری، اقلیتی امیدواروں کی ٹریننگ، سکریٹری اقلیتی بہبود کی مساعی

٭     تعلیم یافتہ بے روزگار نوجوانوں کو سنہری موقع
٭  اقلیتی طلباء ٹریننگ سے استفادہ کرتے ہوئے
ملازمت حاصل کرسکتے ہیں
٭  پولیس ٹریننگ کیلئے پرانے شہر میں زائد مراکز کا قیام
حیدرآباد ۔ 16 ۔ ڈسمبر (سیاست  نیوز) محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے اقلیتی طلبہ کو پولیس تقررات کیلئے ٹریننگ کا بہت جلد آغاز ہوگا۔ حیدرآباد میں 5 مختلف مقامات کی نشاندہی کرتے ہوئے ٹریننگ کے آغاز کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ توقع ہے کہ آئندہ ہفتہ ٹریننگ کا باقاعدہ آغاز کردیا جائے گا ۔ پولیس رکروٹمنٹ بورڈ کے ذریعہ 10269 مختلف جائیدادوں کیلئے بہت جلد اعلامیہ جاری کیا جائے گا۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے پولیس رکروٹمنٹ بورڈ کے ذمہ داروں سے بات چیت کی اور تقررات میں مسلمانوں کو 4 فیصد کو یقینی بنانے کی خواہش کی۔ پولیس رکروٹمنٹ بورڈ نے اعلامیہ کی اجرائی کے موقع پر 4 فیصد مسلم تحفظات کو شامل کرنے کا تیقن دیا ہے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے بتایا کہ پولیس تقررات کے سلسلہ میں تحریری امتحان کے علاوہ فزیکل ٹریننگ دی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ پرانے شہر سے تعلق رکھنے والے تعلیم یافتہ بیروزگار نوجوانوں کو پولیس میں بھرتی کیلئے یہ سنہری موقع ہے۔ اقلیتی طلبہ اس ٹریننگ سے استفادہ کرتے ہوئے محکمہ پولیس میں اپنی نمائندگی میں اضافہ کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کمشنر پولیس مہیندر ریڈی نے بھی محکمہ اقلیتی بہبود سے خواہش کی ہے کہ پولیس ٹریننگ کیلئے پرانے شہر میں زائد مراکز قائم کئے جائیں۔ تلنگانہ اسٹڈی سنٹر فار میناریٹیز کے ذریعہ ٹریننگ کا اہتمام کیا جائے گا ۔  اس سلسلہ میں درخواستیں طلب کی گئی ہیں اور سکریٹری اقلیتی بہبود کے مطابق درخواستوں کا موقف حوصلہ افزاء ہے ۔ شہر کے علاوہ مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے طلبہ نے بھی درخواستیں داخل کی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ تحریری امتحان کی تیاری کیلئے مختلف شعبوں کے ماہر اساتذہ کی خدمات حاصل کی جائیں گی ۔ اس کے علاوہ اسپورٹس اتھاریٹی آف تلنگانہ نے فزیکل ٹریننگ کیلئے انسٹرکٹرس فراہم کرنے سے اتفاق کیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ بیرون حیدرآباد سے تعلق رکھنے والے طلبہ کیلئے اسٹڈی سنٹر کے دفتر واقع گن فاؤنڈری میں کلاسس کا اہتمام کیا جائے گا جبکہ پرانے شہر میں اردو مسکن خلوت، سٹی کالج اور بنڈلہ گوڑہ کی نشاندہی کی گئی ہے۔ درخواستوں کی تعداد کے اعتبار سے مزید مراکز قائم کئے جائیں گے اور اس کے لئے  موجودہ کمپیوٹر سنٹرس کی عمارتوں کا استعمال کیا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قلی قطب شاہ اسٹیڈیم اور فتح میدان اسٹیڈیم میں امیدواروں کی فزیکل ٹریننگ کا اہتمام کیا جائے گا۔ سید عمر جلیل کے مطابق پولیس رکروٹمنٹ بورڈ کی جانب سے جن 10269 جائیدادوں پر تقررات کا اعلامیہ جاری کیا جائے گا ۔ ان میں پولیس کانسٹبل اے آر کی 2760 ،  پو لیس کانسٹبل ایس اے آر سی پی ایل (56) ، پولیس کانسٹبل سیول 1810 ، پولیس کانسٹبل پندرھویں بٹالین تلنگانہ اسٹیٹ اسپیشل پولیس (117) ، پولیس کانسٹبل اسپیشل پولیس 4068 جائیدادیں شامل ہیں، جو مجموعی طور پر 8808 ہوتی ہیں۔ اس کے علاوہ ایس آئی سیول 208 ، ایس آئی اے آر 74 ، آر ایس آئی 205 ، سب انسپکٹر (ایس اے آر سی پی ایل) 2 ، ایس آئی کمیونکیشن 23 ، ایس آئی پی ٹی او 6 ، پولیس کانسٹبل کمیونکیشن 332 جائیدادیں شامل ہیں۔ سید عمر جلیل نے کہا کہ تقررات کے اعلامیہ کی اجرائی سے قبل ہی ٹریننگ کے آغاز کا منصوبہ ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ اقلیتی طلبہ محکمہ پولیس میں تقررات حاصل کرسکیں۔

TOPPOPULARRECENT