Tuesday , January 23 2018
Home / شہر کی خبریں / پولیس پر حملہ کرنے والی ٹولی کے ارکان کی شناخت

پولیس پر حملہ کرنے والی ٹولی کے ارکان کی شناخت

حیدرآباد ۔ 2 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : سائبر آباد پولیس نے شاہ میر پیٹ واقعہ کی تحقیقات میں پیشرفت اختیار کرلی ہے اور مزید ایک ڈاکو کو گرفتار کرلیا ہے جب کہ پولیس کو ٹولی کے سردار اور اصل سرغنہ ایلم گوڑ کی تلاش ہے ۔ پولیس نے کل رات کانسٹبل کے ہمراہ ہلاک ڈاکوؤں کی ٹولی کے رکن کی شناخت کرلی ہے ۔ اور بتایا جاتا ہے کہ اس شخص کی شناخت مصطفی کی حیثیت سے کرلی گئی ہے ۔ باوثوق ذرائع کے مطابق کل رات جہاں پولیس پر حملہ اور پولیس کی جانب سے فائرنگ کا واقعہ پیش آیا ۔ اس موقع پر نقلی کرنسی ٹولی کے صرف دو افراد مصطفی اور سریکانت موجود تھے ۔ اور سب انسپکٹر وینکٹ ریڈی کے ہمراہ ہلاک کانسٹبل ایشور اور دیگر موجود تھے ۔ یہ ایک خفیہ آپریشن تھا جس میں پولیس بری طرح ناکام ہوگئی اور اپنے ایک کانسٹبل کی جان بھی گنوانا پڑا ۔ ذرائع کے مطابق ایلم گوڑ جو بدنام زمانہ سارق اور ڈاکو ہے اس کے خلاف تقریبا 30 مقدمات پائے جاتے ہیں ۔ دو ماہ قبل ایلم گوڑ جیل سے رہا ہوا تھا اور اس نے ٹولی تیار کرلی تھی ۔ اس کی ٹولی میں راگھو ، نریش ، مصطفی اور سریکانت کو شامل کرلیا ۔ انہوں نے ایک اسکیاننگ کی مشین خریدی تھی اور ایک ہزار کی کرنسی نوٹوں کو اسکیان کرتے ہوئے دھوکہ دے رہے تھے ۔ اس ٹولی کا یہ طریقہ کار تھا کہ وہ ایک لاکھ اصل کرنسی لے کر دو لاکھ نقلی کرنسی دیا کرتے تھے ۔ ممبی میں اس ٹولی نے ایک شخص کو دھوکہ دیا تھا اور اس کی شکایت پر بالا نگر زونل ٹاسک فورس ٹیم کے سپرد ذمہ داری دی گئی تھی ۔ اور ایس آئی وینکٹ ریڈی ٹولی کو بے نقاب کرنے کے آپریشن پر تھے ۔ انہوں نے اس ٹولی کے دو افراد راگھو اور نریش کو گرفتار کرلیا تھا اور ایلم گوڑ اور دیگر کو گرفتار کرنے کے لیے جال بچھایا تھا ۔ ایلم گوڑ اور اس کے ساتھی سدی پیٹ ضلع میدک ساکنان تھے ۔ ایس آئی اور دیگر عملہ نے سدی پیٹ پہونچکر ایلم گوڑ کو ایک لاکھ روپئے اصل کرنسی دی اور دو لاکھ روپئے نقلی کرنسی حاصل کی ۔ اس کے بعد ایس آئی نے راگھو اور نریش کو لے کر حیدرآباد کا رخ کیا ۔ پھر ان سے ایلم گوڑ کو فون کروایا اور کہا گیا کہ پارٹی تیار ہے لیکن مجید پور آنا پڑے گا جس کے بعد ایلم گوڑ نے سریکانت اور مصطفی کو روانہ کیا جو لوگ چوراہے پر پارٹی کے انتظار میں تھے کہ اچانک راگھو اور نریش نے ایس آئی اور پولیس کانسٹبل ایشور کو پارٹی ظاہر کرتے ہوئے پیش کیا تاہم ان کو دیکھ کر مصطفی اور سریکانت چوکس ہوگئے اور فوری حملہ کردیا ۔ مصطفی نے چاقو سے حملہ کردیا ۔ اس محلہ کا بچاؤ کرنے ایس آئی وینکٹ ریڈی نے فائرنگ کردی ۔ اس حملہ میں ایشور اور مصطفی ہلاک ہوگئے ۔ اور سریکانت فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا ۔ تاہم ہائی وے پر سریکانت کو گرفتار کرلیا گیا اور پولیس کو ایلم گوڑ کی تلاش ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT