Wednesday , November 22 2017
Home / جرائم و حادثات / پولیس کو ایوب خان کے قاضی اور پاسپورٹ ایجنٹ کی تلاش

پولیس کو ایوب خان کے قاضی اور پاسپورٹ ایجنٹ کی تلاش

حیدرآباد /13 جنوری ( سیاست نیوز ) خطرناک روڈی شیٹر ایوب خان کے خلاف ساؤتھ پولیس کی جانب سے سخت کارروائی جاری ہے اور اسے آج پھر ایک مرتبہ شاہ علی بنڈہ پولیس نے لینڈ گرابنگ کیس میں ایک دن کیلئے پولیس تحویل میں لیکر تفتیش کی ۔ گذشتہ 8 دن کی پولیس تحویل کے دوران تحقیقاتی عہدیداروں کو اس بات کا پتہ چلا ہے کہ ایوب خان کو فرضی پاسپورٹ فراہم کرنے میں شاد نگر ایک قاضی اور پرانے شہر کے ایک پاسپورٹ ایجنٹ نے بھرپور مدد کی ۔ جیل میں محروس رہنے کے دوران فرضی پاسپورٹ کی حصولی کیلئے ایوب خان کی بیوی حفیظہ بیگم نے مبینہ طور پر قاضی سید مقتدر متوطن شادنگر اور پاسپورٹ ایجنٹ خالد احمد کی مدد سے پاسپورٹ تیار کروایا تھا ۔ روڈی شیٹر کے برادر نسبتی محمد قیصر الدین نے بھی پاسپورٹ کی حصولی میں مدد کی ۔ باثوق ذرائع نے بتایا کہ ایوب خان کی شادی جہاں نما کے ایک فنکشن ہال میں سال 1993 میں ہوئی تھی اور اس نے گولکنڈہ قضات سے نکاح نامہ حاصل کیا تھا لیکن فرضی پاسپورٹ حصول کیلئے شاد نگر کے قاضی نے ضلع محبوب نگر میں تماپور ولیج میں ایوب خان اور حفیظہ بیگم کی شادی کا ایک نکاح نامہ تیار کیا ۔ پولیس نے قاضی اور پاسپورٹ ایجنٹ کی تلاش شروع کردی ہے جبکہ بیوی اور برادر نسبتی کو بھی فرضی پاسپورٹ کیس میں ملزم بنایا گیا ہے ۔ واضح رہے کہ 27 ڈسمبر سال 2016 کو ممبئی ایرپورٹ پر اور گرفتار ہونے والے کالے پتھر کے خطرناک روڈی شیٹر ایوب خان کو ساؤتھ زون پولیس نے گرفتار کرکے حیدرآباد منتقل کیا تھا اور اس کے خلاف فرضی پاسپورٹ کا ایک مقدمہ کاماٹی پورہ پولیس اسٹیشن میں درج کرتے ہوئے اسے 8 دن کی پولیس تحویل میں لیکر تفتیش کی تھی ۔ ذرائع نے بتایا کہ ایوب خان کو کل حسینی علم پولیس اور بعد ازاں گولکنڈہ پولیس نے بھی ایک دن کی پولیس تحویل میں لیکر تحقیقات کرے گی ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT