Monday , June 18 2018
Home / جرائم و حادثات / پولیس کی نظر میں دہشت گرد ، سکھ برادری کے ہیرو

پولیس کی نظر میں دہشت گرد ، سکھ برادری کے ہیرو

حیدرآباد /6 مئی ( سیاست نیوز ) پولیس جنہیں دہشت گرد مانتی ہے ۔ سکھ برادری کیلئے وہ ہیرو ہیں ۔ اپنی تاریخ سے قوم کی نئی نسل کو واقف کروانے کیلئے فلم سازی کی جارہی ہے جارہا ہے ۔ بیرون ملک کے پروڈیوسرس کی جانب سے تیار کردہ فلمیں امکان ہے کہ ماہ جون میں ریلیز کردی جائے گی ۔ انٹرنیٹ ویب سائیٹس اور سوشیل نٹ ورکنگ پر نظر رکھنے والی قومی جاسوس ا

حیدرآباد /6 مئی ( سیاست نیوز ) پولیس جنہیں دہشت گرد مانتی ہے ۔ سکھ برادری کیلئے وہ ہیرو ہیں ۔ اپنی تاریخ سے قوم کی نئی نسل کو واقف کروانے کیلئے فلم سازی کی جارہی ہے جارہا ہے ۔ بیرون ملک کے پروڈیوسرس کی جانب سے تیار کردہ فلمیں امکان ہے کہ ماہ جون میں ریلیز کردی جائے گی ۔ انٹرنیٹ ویب سائیٹس اور سوشیل نٹ ورکنگ پر نظر رکھنے والی قومی جاسوس ایجنسی نے اب ایسی فلموں کی ریلیز پر اپنی توجہ مرکوز کی ہے ۔ حالانکہ چند ایک فلموں کو سینسر بورڈ نے سابق میں روک دیا تھا اور اب جب جاری کیا گیا تو اس میں کافی تبدیلیاں لائی گئی ۔ ایسی روکاوٹوں کے خوف سے بیرون ملک بیرون شہریوں کے ذریعہ سرمایہ داری کرتے ہوئے فلموں کو تیار کیا جارہا ہے تاکہ سینسر بورڈ رکاوٹ نہ بن سکے ۔ ان فلموں میں 1984 کے آپریشن بلیو اسٹار جو کہ حکومت کے خلاف انجام دیا گیا تھا اور اس آپریشن کو انجام دینے اور سرپرستی کرنے والے جنرل ویدیا کے قاتلوں کو ہیرو کے طور پر پیش کیا جارہا ہے ۔ اس طرح کی چار فلمیں تیار کی جارہی ہیں جو آسٹریلیا اور کینڈا میں رہنے وال افراد تیار کر رہے ہیں۔ چار فلموں میں سے ایک فلم جون کے پہلے ہفتہ میں ریلیز ہوگی ۔ 1984 کے آپریشن بلو اسٹار کا انتقام لینے کیلئے جو کارروائی کی گئی تھی

اور اس آپریشن کی سرپرستی کرنے والے جنرل ویدیا کو 1986 میں ہلاک کیا گیا تھا ۔ اس دوران کے حالات اور آپریشن کو اس فلم میں پیش کرنے کے امکانات ہیں۔ جن دو افراد نے اس جنرل کو ہلاک کیا تھا ان دونوں کو پولیس دہست گرد مانتی ہے تو اس فلم میں یہ دونوں کو ہیرو بنایا گیا ہے ۔ یاد رہے کہ اندرا گاندھی کو مارنے والوں کی حمایت اور ان حالات پر تیار کردہ فلم ہندوستان میں بنائی گئی تھی ۔ سینسر بورڈ نے اسے مسدود کردیا تھا اور ایسے ہی حالات و روکاٹوں کے پیش نظرفلمیں بیرونی شہری تیار کر رہے ہیں ۔ قوم کی نئی نسل کو تاریخ سے واقف کروانے اور ظلم و زیادتیوں کی روک تھام کیلئے تاریخی کتابوں سے واقف کروایا جاتا ہے اور موجودہ حالات سے واقف کروانے کیلئے جریدے ، پمپلٹس ، بک لیٹ پوسٹرس وغیرہ کے ذریعہ اپنے پیغام کو عام کروایا جاتا تھا ۔ تاہم ایسی کوششوں پر پولیس کی مفت نظر اور انفارمیشن سسٹم کے بڑھتے رحجان کے بعد اب فلموں کا سہارا لیا جارہا ہے ۔ ایسی کوششوں سے انٹلی جنس بیورو کی فکر میں مزید اضافہ ہوگیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT