Sunday , December 17 2017
Home / ہندوستان / پونچھ کے گاؤں میں پراسرار بیماری ، متاثرین کا آدھار کارڈ بننا مشکل

پونچھ کے گاؤں میں پراسرار بیماری ، متاثرین کا آدھار کارڈ بننا مشکل

جموں23مارچ (سیاست ڈاٹ کام) جموں وکشمیر کے سرحدی ضلع پونچھ کے ایک دور دراز گاؤں میں قریب ایک سو دیہاتی کافی عرصہ سے ایک پراسرار بیماری میں مبتلا رہنے کی وجہ سے آدھار کارڈ بنوانے سے محروم ہوکر رہ گئے ہیں جس کے نتیجے میں وہ سرکاری اسکیموں سے استفادہ بھی حاصل نہیں کرپاتے ۔ایک نامعلوم وبائی بیماری جس نے ضلع پونچھ کے تحصیل منڈی کے موضع ارائی کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے ، دیہاتیوں کو معذور بناکر رکھ دیا ہے ۔اس کی وجہ سے متاثرہ افراد اپنے لئے آدھار کارڈ بھی نہیں بنوا پائے ہیں اور نتیجتاً معذور ہونے کے باوجود سرکاری اسکیموں سے فائدہ اٹھانے سے قاصر ہیں۔ پنچایت مالکا سے تعلق رکھنے والے 53 سالہ محمد فرید نے بتایا کہ موضع ارائی کے رہائشی کئی دہائیوں سے ایک نامعلوم بیماری کی گرفت میں ہیں۔ یہ بیماری بدن میں درد سے شروع ہوتی ہے اور انسان کو معذور بناکر رکھ دیتی ہے ۔ فرید نے بتایا کہ یہ بیماری 5 تا 8 سال عمر کے بچوں کو لپیٹ میں لیتی ہے اور اب تک قریب 90 افراد کے اعضا اور آنکھیں متاثر ہوچکی ہیں۔ آدھار کارڈ کے لئے بائیومیٹرک ڈیٹا حاصل کیا جاتا ہے اور 10انگلیوں کے نشانات کے علاوہ دونوں آنکھوں کی پُتلیوں کی تصویریں لی جاتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT