Thursday , July 19 2018
Home / شہر کی خبریں / پون کلیان کی سی پی آئی و سی پی آئی ایم قائدین سے ملاقات

پون کلیان کی سی پی آئی و سی پی آئی ایم قائدین سے ملاقات

صدر جناسینا کی مجوزہ بھوک ہڑتال اور مرکزی حکومت کے رویہ پر بات چیت
حیدرآباد ۔ 4 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : جنا سینا قائد مسٹر پون کلیان نے ریاست کو خصوصی موقف فراہم کرنے کے مطالبہ پر اپنی جانب سے شروع کی جانے والی مجوزہ غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال اور پارلیمنٹ میں تحریک عدم اعتماد پر مباحث کے لیے راہ ہموار نہ ہونے بلکہ ہر روز پارلیمانی کارروائی کو ملتوی کئے جانے کے پیش آنے والے واقعات کو مد نظر رکھتے ہوئے آج وجئے واڑہ میں پھر ایکبار سی پی آئی اور سی پی آئی ایم و دیگر جماعتوں کے ساتھ جناسینا پارٹی آفس میں اجلاس منعقد کیا ۔ سی پی آئی ریاستی سکریٹری آندھرا پردیش مسٹر کے راما کرشنا سی پی آئی ایم ریاستی سکریٹری آندھرا پردیش مسٹر بی مدھو و دیگر قائدین نے شرکت کی ۔ بتایا جاتا ہے کہ اس موقع پر بائیں بازو جماعتوں کے قائدین سے اپنی مجوزہ غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال پروگرام پر پون کلیان نے تبادلہ خیال کیا اور ساتھ ہی ساتھ دہلی کے حالات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ سمجھا جاتا ہے کہ پون کلیان آندھرا پردیش کو خصوصی موقف فراہم کرنے کے مطالبہ پر ماہ مئی کے بعد ہی اپنی غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال شروع کرسکتے ہیں ۔ اجلاس نے تحریک عدم اعتماد پر مباحث نہ ہونے دینا اور مسلسل پارلیمنٹ کی کارروائی کو ملتوی کردیا جانا عوامی جمہوریت کے لیے ایک سیاہ دھبہ قرار دیا اور یہ اقدامات تلگو عوام کے ساتھ دھوکہ کرنے کے مترادف ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ اجلاس میں 6 اپریل کو قومی شاہراہوں پر پدیاترائیں منظم کرنے کا فیصلہ کیا اور پدیاترا کے بعد اضلاع اننت پور ، وجیانگرم ، پرکاشم میں دانشوروں کے ساتھ اجلاس طلب کر کے بات چیت کرنے ، جلسوں کا انعقاد عمل میں لانے کا فیصلہ کیا گیا ۔ علاوہ ازیں 6 اپریل کو وجئے واڑہ میں منظم کی جانے والی پدیاترا میں وہ خود ( پون کلیان ) بھی شرکت کریں گے اور جس ضلع کے قائدین اسی ضلع میں منظم کی جانے والی پدیاترا میں حصہ لیں گے ۔ مسٹر کے راما کرشنا سکریٹری سی پی آئی آندھرا پردیش کمیٹی نے کہا کہ ریاست کے لیے خصوصی موقف ، تقسیم ریاست کے موقع پر دئیے گئے تیقنات پر عمل کرنے کے مطالبہ پر مرکزی حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد پیش کرنے کا پون کلیان نے تلگو دیشم اور وائی ایس آر سی پی سے مطالبہ کیا تھا ۔ اس مطالبہ کی روشنی میں ہی وائی ایس آر کانگریس پارٹی اور تلگو دیشم پارٹی نے تحریک عدم اعتماد پیش کیں ۔ لیکن ان دونوں ہی جماعتیں ایکدوسرے کے خلاف الزامات و جوابی الزامات عائد کر کے ریاست کے پانچ کروڑ عوام کی توقعات کو نظر انداز کررہی ہیں ۔ مسٹر راما کرشنا نے کہا کہ مرکزی حکومت کی جانب سے آندھرا پردیش ریاست کو دئیے گئے دھوکہ کے خلاف 6 اپریل کو پدیاترا منظم کی جائے گی ۔ اسی دوران ریاستی سکریٹری سی پی آئی ایم آندھرا پردیش کمیٹی مسٹر پی مدھو نے بتایا کہ ریاست بھر میں 6 اپریل کو مرکزی حکومت کے طرز عمل کے خلاف بڑے پیمانے پر پدیاترائیں منظم کی جائیں گی ۔ بالخصوص وجئے واڑہ کی شاہراہوں پر پدیاترا کی جائے گی ۔ انہوں نے مرکزی حکومت سے ریاست کے ساتھ کی جانے والی نا انصافیوں کے مسئلہ پر اپنے ردعمل کا اظہار کرنے کا مطالبہ کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT