Wednesday , July 18 2018
Home / شہر کی خبریں / پون کلیان کے ذریعہ اپوزیشن کے ووٹ متاثر کرنے چندر شیکھر راو کا منصوبہ؟

پون کلیان کے ذریعہ اپوزیشن کے ووٹ متاثر کرنے چندر شیکھر راو کا منصوبہ؟

اداکار کے تلنگانہ و آندھرا میں دورہ کے سیاسی مقاصد ۔ آندھرا پردیش میں برسر اقتدار میں تلگو دیشم پارٹی بھی ناخوش

حیدرآباد۔/23جنوری ، ( سیاست نیوز) تلگو فلم اداکار پون کلیان تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں سیاسی اثر دکھانے کی کوشش میں مصروف ہیں۔ جنا سینا پارٹی قائد پون کلیان کے تلنگانہ میں دورہ سے برسراقتدار تلنگانہ راشٹرا سمیتی کو فائدہ ہوگا یا نقصان اس بات کا اندازہ نہیں لگایا جاسکتا لیکن حکومت کا یہ احساس ہے کہ نوجوان نسل کو پون کلیان اپنا ہمنوا بناتے ہوئے انہیں تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی سمت راغب کرواسکتے ہیں۔ اسی طرح پون کلیان ریاست آندھرا پردیش حکومت کو تنقید کا نشانہ بنانے میں مصروف ہیں لیکن آندھرا پردیش میں بھی یہ نہیں کہا جاسکتا کہ تلگودیشم پارٹی کو نقصان پہنچانے کی کوشش میں تلگو فلم اداکار کامیاب ہو پائیں گے یا نہیں۔ حکومت تلنگانہ کی زرعی پالیسی کا سراہنا کرتے ہوئے پون کلیان نے ذرائع ابلاغ میں سرخیاں حاصل کی اور اس کے بعد حکومت نے پون کلیان کو ریاست میں عوام سے ملاقات کے پروگرام کی منظوری فراہم کی ہے لیکن اس مہم کے دوران وہ صرف کسانوں سے ملاقات کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ پون کلیان کے استعمال کے ذریعہ مخالف حکومت ووٹوں کو منقسم کرنے کی حکمت عملی تیار کئے ہوئے ہیں اور ریاست میں اپوزیشن جماعتوں کو حاصل ہونے والے استحکام کو کمزور کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ اپوزیشن جماعتوں کے قائدین کا کہنا ہے کہ چیف منسٹر کے اس حربہ سے عوام اچھی طرح واقف ہیں کہ کس طرح چیف منسٹر تلگو فلم اداکار پون کلیان کا استعمال کرتے ہوئے عوامی رائے کو منقسم کرنے کا منصوبہ تیار کئے ہوئے ہیں۔ ریاست آندھرا پردیش میں پون کلیان نے حکومت کے خلاف جو موقف اختیار کیا ہے اس سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ حکومت آندھرا پردیش کی کارکردگی سے وہ مطمئن نہیں ہیں اسی لئے تلگودیشم کے خلاف چلائی جانے والی سرگرم مہم کا حصہ بنتے جارہے ہیں۔ سیاسی ماہرین کا کہنا ہے کہ آندھرا پردیش میں پون کلیان کا اثر ہوسکتا ہے لیکن ریاست تلنگانہ میں عوام بالخصوص کسانوں کا بڑا طبقہ ریاستی حکومت کی کارکردگی سے مطمئن نہیں ہے اسی لئے حکومت نے فلمی ستاروں کو استعمال کرنے کی حکمت عملی تیار کی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ریاست آندھرا پردیش میں پون کلیان کے موقف سے تلگودیشم پارٹی خوش نہیں ہے مگر یہ کہہ رہی ہے کہ ریاست میں پون کلیان کا کوئی اثر نہیں ہوگا اور نہ ہی اس کا کوئی فائدہ آندھرا پردیش کی اپوزیشن جماعت وائی ایس آر کانگریس کو حاصل ہوگا۔ پون کلیان کے متعلق سیاسی مبصرین کا کہنا ہے کہ وہ عوام کے ہردلعزیز ہیرو ہوسکتے ہیں لیکن ان میں رائے دہندوں کی ذہنیت کو تبدیل کرنے کا رجحان نہیں پایا جاتا اسی لئے یہ سمجھا جارہا ہے کہ جنا سینا بھی آئندہ انتخابات میں تلنگانہ میں حصہ لے گی اور اپنے کیڈر کو مستحکم کرنے کی کوشش کرے گی تاکہ ان کی کوشش کے نتیجہ میں برسراقتدار جماعت متزلزل ہوجائے جبکہ برسر اقتدار تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے قائدین کا ماننا ہے کہ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی شخصیت اور انتخابات کے دوران کئے گئے وعدوں کی تکمیل کے سبب عوام میں کے سی آر کی شخصیت کسی اور سیاسی قائد یا فلمی ستاروں سے بڑھ کر ہے۔ اسی لئے عوام ٹی آر ایس سے دور نہیں ہوں گے جبکہ حکومت آندھرا پردیش کا ماننا ہے کہ پون کلیان کی جانب سے چلائی جانے والی مخالف حکومت مہم کا راست فائدہ بدعنوانیوں میں ملوث افراد کی پارٹی کو حاصل ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT