Monday , December 18 2017
Home / Top Stories / پوپ فرانسیس اور امام مسجد الازہر کی ملاقات

پوپ فرانسیس اور امام مسجد الازہر کی ملاقات

وٹیکن سٹی ۔ 23 مئی (سیاست ڈاٹ کام) پوپ فرانسیس نے آج قاہرہ کی مسجد الازہر کے امام سے تاریخی ملاقات کی اور اس موقع پر دونوں نے انتہائی گرمجوشی کا مظاہرہ کیا۔ دونوں ایک دوسرے سے بغلگیر ہوگئے تھے۔ پوپ فرانسیس کے 2013ء میں اس اہم عہدہ کا جائزہ حاصل کرنے کے بعد عیسائی سربراہ اور مسلمانوں کی اہم مذہبی شخصیت کے مابین یہ پہلی ملاقات تھی۔ بعدازاں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے پوپ فرانسیس نے کہا کہ شیخ احمد الطیب کے ساتھ ہورہی یہ ملاقات خود ہمارا پیام ہے۔ الازہر نے اس دورہ کے موقع پر ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ شیخ احمد الطیب نے پوپ فرانسیس کی دعوت قبول کی ہے تاکہ امن اور بقائے باہم کے پیام کو عام کرنے کیلئے کوششوں کو وسعت دی جاسکے۔ یہ ملاقات انتہائی خیرسگالی کے ماحول میں ہوئی جو تقریباً نصف گھنٹہ جاری رہی۔ وٹیکن نے مذاکرات کے ختم پر ایک بیان میں یہ بات بتائی۔ شیخ احمد الطیب کے دورہ روم کے فیصلہ کا غیرمتوقع طور پر گذشتہ ہفتہ اعلان کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی پوپ فرانسیس کے پیشرو بینڈکٹ XVI کے ساتھ جو کشیدگی چلی آرہی تھی اس میں نمایاں کمی آئی ہے۔ بینڈکٹ نے 2006ء میں تقریر کے دوران اسلام کو تشدد سے مربوط کیا تھا جس کے بعد کئی ممالک میں احتجاجی مظاہرے ہوئے اور عیسائیوں پر جوابی حملے بھی کئے گئے۔ پوپ جان پال II نے 2000ء میں اس وقت کے امام مسجد الازہر سے ملاقات کی تھی۔ 11 ستمبر حملوں سے ایک سال قبل یہ ملاقات ایسے وقت ہوئی جبکہ نیویارک نے مغرب اور  اسلامی دنیا کے مابین تعلقات کو ایک نئی شکل دی تھی۔

TOPPOPULARRECENT