Monday , November 20 2017
Home / دنیا / پُرتشدد نسل پرستی اور سامی مخالفت کا کوئی جواز نہیں

پُرتشدد نسل پرستی اور سامی مخالفت کا کوئی جواز نہیں

شمالی کیرولینا سٹی میں وفاقی مجسمہ منہدم ‘ ٹکساس یونیورسٹی میں نسل پرستوں کا جلوس منسوخ
اقوام متحدہ ۔ 15اگست ( سیاست ڈاٹ کام) اقوام متحدہ کے معتمد عمومی انٹیونو گٹریس نے سختی سے شارلٹس ویلے کے شہریوں کو نشانہ بناتے ہوئے کئے ہوئے تشدد کی مذمت کی ہے اور کہا کہ نسل پرستی سامی مخالفت اور معاشرہ میں زینوفوبیا کا کوئی جواز نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ شارلٹس ویلے میں چند دن قبل تشدد کی خبروں سے انہیں صدمہ پہنچا ہے ۔جب کہ نسل پرستوں کے پُرامن احتجاجی جلسوس کے دوران تشدد سے ایک 25سالہ خاتون ہلاک ہوگئی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ ہم ہر قسم کی نسل پرستی اور تعصب کے خلاف ہیں ‘ ہمیں یقین ہے کہ ہمارے معاشروں میں پُرتشدد نسل پرستی سامی مخالفت ‘ زینوفوبیا اور فرق و امتیاز کی کوئی گنجائش نہیں ہے ۔ جیسا کہ امریکی ریاست ورجینیا کے شہر شارلٹس ویلے میں حالیہ دنوں میں دیکھا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے سفید فام نسل پرست افراد کے جلوس کے بارے میں ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ یہ ایک پُرامن احتجاجی جلوس تھا جس کے بعد شارلٹس ولے میں تشدد پھوٹ پڑا ۔ واشنگٹن سے موصولہ اطلاع کے بموجب شمالی کیرولینا سٹی میں ایک وفاقی فوجی کا مجسمہ منہدم کردیا گیا جب کہ دو دن قبل یہ پُرتشدد احتجاج قوم پرستوں کے مبینہ طور پر ایک اور وفاقی تاریخی عمارت کو منہدم کرنے کے منصوبوں کے خلاف پھوٹ پڑا تھا ۔ مقامی ٹی وی نیٹ ورک’’ ڈرہیم‘‘ شمالی کیرولینا نے کہاکہ مجسمہ کی جھلکیاں جو ڈرہیم کاؤنٹی کی عدالت کے روبرو نصب تھا جسے کئی افراد منہدم کررہے تھے دکھائی گئی ہیں ۔ احتجاجی مجسمہ کے انہدام پر خوشی سے چیخ چلارہے تھے ۔ ایک شخص زینہ پر چڑھا ہوا تھا اور مجسمہ کے اطراف زرد کپڑا لپیٹ رہا تھا ۔ ایک احتجاجی مظاہرہ کرنے والے شخص نے مجسمہ زمین پر گرا دیا ۔ بعض افراد مجسمہ پر تھوک رہے تھے اور اسے لاتیں مار رہے تھے اور چلارہے تھے کہ ہم کے کے کے یا فسطائی امریکن نہیں ہیں بلکہ انقلابی ہیں ۔ عوام متحد ہیں اور انہیں کبھی شکست نہیں ہوگی ۔ شکاگو سے موصولہ اطلاع کے بموجب ٹکساس یونیورسٹی میں سفید فام نسل پرستوں کے مجوزہ جلوس کی تنسیخ کا اعلان کیا ہے جو یونیورسٹی کے احاطہ سے آئندہ ماہ نکالا جانے والا تھا ۔یونیورسٹی کے بموجب یہ جلوس حفاظتی اندیشوں ‘ مہلک تشددکے اندیشوں کی بناء پر منسوخ کیا گیا ہے کیونکہ ایسے ہی ایک جلوس کے دوران ریاست ورجینیا میں تشدد ہوچکا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT