Tuesday , December 12 2017
Home / ہندوستان / پٹاخوں کی آوازسے شکم ماد رمیں بچے پر منفی اثر کے اندیشے

پٹاخوں کی آوازسے شکم ماد رمیں بچے پر منفی اثر کے اندیشے

لکھنؤ۔17اکتوبر(سیاست ڈاٹ کام)پٹاخوں کے تیز دھماکے اور ان سے نکلنے والی زہریلی گیس سے عام آدمی ہی نہیں شکم مادرمیں پل رہے بچے پر بھی منفی اثر ڈال سکتاہے ۔ڈاکٹروں اور دانشوروں نے دیوالی اور دوسرے مواقع پر پٹاخوں اور آتشبازی جلانے سے ماحولیات پر پڑرہے مضر اثرات پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے پٹاخوں پر مکمل پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا۔لکھنؤ میں واقع سول اسپتال کے سینئر ڈاکٹر اور ریجنل ڈاکٹرز فیڈریشن کے صدر ڈاکٹر اشوک یادو کا کہنا ہے کہ دیوالی روشنی کا تہوار ہے لیکن پٹاخوں کی بڑھتی مانگ نے اسے دھماکہ تہوار بنادیا۔انہوں نے پٹاخوں سے خارج ہونے والے دھوئیں سے ہماری صحت پر اثر تو پڑہی رہاہے لیکن شکم مادر میں پل رہے بچے پر بھی اس کا برا اثر پڑتاہے ۔انہوں نے بتایا کہ پٹاخوں کی تیز آواز سے زچگی سے قبل درد زہ شروع ہوسکتا ہے ۔حاملہ خواتین کو پٹاخے چلانے سے احتزاز کرنا چاہئے ۔پٹاخوں کی تیز آواز کو کم کرنے اورزہریلے دھوئیں سے بچنے کیلئے گھر کے اندر ہی رہنا چاہئے ۔پٹاخوں کا دھواں زہریلا ہوتا ہے ۔اس میں ثقیل دھاتیں مثلاًسیسہ،کیڈیم،میگنیز،نائٹریٹس،تانبہ سلفرآکسائیڈبھی ہوتے ہیں۔اگر کثافت کی سطح بہت زیادہ ہے تو زچگی کے بعد نوزائیدہ کے نشو نما میں تاخیر اور بہرہ پن بھی ہوسکتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT