Thursday , April 19 2018
Home / Top Stories / پٹرول ، ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ پر سب پریشان

پٹرول ، ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ پر سب پریشان

نئی دہلی، 17جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ڈیزل اور پٹرول کی قیمتوں میں ریکارڈ اضافہ سے گاڑیوں کے مالکان کو ہی نہیں بلکہ کسانوں کو بھی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ حکومت نے 15 اکتوبر کو دونوں ایندھنوں کی قیمتیں بین الاقوامی بازارکے مطابق روزانہ کے اتارچڑھاؤ کے تحت طے کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ اس کے بعد سے دونوں ہی ایندھنوں میں قیمتوں میں اضافہ کا سلسلہ بدستور جاری ہے ۔ دارالحکومت دہلی میں ڈیزل کی قیمت 62 روپے فی لیٹر کو بھی پار کرگئی ہے ۔ آ ج اس کی قیمت 62.06 روپے فی لیٹر ہوگئی ہے ۔ 15 اکتوبر سے ڈیزل کی قیمت 5.12 روپے فی لیٹر بڑھ چکی ہے ۔ حکومت نے اس دوران ایکسائز ڈیوٹی میں تخفیف کرکے چھوٹ دینے کی کوشش بھی کی لیکن بین الاقوامی بازار میں آئے نشیب و فراز سے راحت زیادہ دن نہیں رہ پائی۔راجدھانی میں پٹرول کی قیمت بھی 15 اکتوبر سے اب تک 3.06 روپے فی لیٹر مہنگی ہوچکی ہے ۔ ڈیزل کے داموں میں اضافہ سے کسانوں کو خاصی پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہاہے ۔ کسانوں کو سینچائی کے لئے اور دیگر کاموں کے لئے وافر مقدار میں ڈیزل پر انحصار کرنا پڑتا ہے ۔ ملک کے چار بڑے شہروں میں سے ممبئی میں ڈیزل پٹرول کے دام سب سے زیادہ ہیں۔ وہاں ڈیزل 66.09 اور پٹرول 79.27 روپے فی لیٹر ہے ۔ 15 اکتوبر سے اب تک ڈیزل پٹرول کی قیمتوں میں بالترتیب 6.61 روپے اور 3.72 روپے فی لیٹر اضافہ ہوا ہے ۔ کولکتہ میں آج ڈیزل 64.72 روپے اور پٹرول 74.11 روپے فی لیٹر ہے ۔ چینائی میں ڈیزل اور پٹرول کی قیمت بالترتیب 65.42 اور 74.02 روپے فی لیٹر ہے ۔

TOPPOPULARRECENT