پٹرول کی قیمت میں 2.38 روپئے تک کمی

نئی دہلی۔ 13 اگست (سیاست ڈاٹ کام) پٹرول کی قیمت میں 15 اگست سے 1.89 تا 2.38 روپئے فی لیٹر کی کمی کی جائے گی۔ وزیر تیل دھرمندر پردھان نے آج یہ اعلان کیا۔ انہوں نے ٹوئٹر پر لکھا کہ 14 اور 15 اگست کی نصف شب سے یہ کمی کی جارہی ہے۔ ایسا شاید پہلی مرتبہ ہوا ہیکہ کسی وزیر نے اعلان کیلئے ٹوئیٹر سے استفادہ کیا۔ جون 2010ء میں پٹرول کی قیمت کو سرکاری کنٹرول

نئی دہلی۔ 13 اگست (سیاست ڈاٹ کام) پٹرول کی قیمت میں 15 اگست سے 1.89 تا 2.38 روپئے فی لیٹر کی کمی کی جائے گی۔ وزیر تیل دھرمندر پردھان نے آج یہ اعلان کیا۔ انہوں نے ٹوئٹر پر لکھا کہ 14 اور 15 اگست کی نصف شب سے یہ کمی کی جارہی ہے۔ ایسا شاید پہلی مرتبہ ہوا ہیکہ کسی وزیر نے اعلان کیلئے ٹوئیٹر سے استفادہ کیا۔ جون 2010ء میں پٹرول کی قیمت کو سرکاری کنٹرول سے آزاد کردیا گیا تھا۔ دھرمندر پردھان نے قیمت میں کمی سے تقریباً 31 گھنٹے پہلے ٹوئٹر پر یہ اعلان کیا۔ اب تک سرکاری ملکیت کی حامل تیل کی کمپنیوں کی جانب سے قیمتوں پر نظرثانی کے ساتھ ہی عمل آوری شروع ہوجاتی تھی۔ اس کا مقصد یہ تھا کہ پٹرول پمپ مالکین ذخیرہ اندوزی نہ کریں۔ صدرنشین انڈین آئیل کارپوریشن بی اشوک نے کل یہ اشارہ دیا تھا کہ بین الاقوامی سطح پر تیل کی قیمتوں میں کمی کے پیش نظر امکان ہیکہ یوم آزادی کے موقع پر ہندوستان میں بھی تیل کی قیمت میں کمی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا تھا کہ پٹرول پر سرکاری کنٹرول نہیں ہے چنانچہ ہر 15 دن میں ایک مرتبہ قیمت میں کمی یا اضافہ ہوتا رہتا ہے۔ اس سے پہلے یکم ؍ اگست کو قیمت میں کمی کی گئی تھی اور اب 15 اگست کو نظرثانی کی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT